جامع مسجد سرینگر میں نماز جمعہ کی ادائیگی پر پابندی

جامع مسجد سرینگر میں نماز جمعہ کی ادائیگی پر پابندی

سرینگر(این این آئی) مقبوضہ کشمیر میں کٹھ پتلی انتظامیہ نے سرینگر کی تاریخی جامع مسجد میں نماز جمعہ ادا کرنیکی اجازت نہیں دی ۔ کشمیر میڈ یا سروس کے مطابق بھارتی فورسز نے جامع مسجد کے دروازے مقفل کر دیئے جبکہ مسجد کی طرف جانیوالی تمام سڑکیں بھی خار دار تاریں بچھا کر بند کردی گئی تھیں، لوگوں کو مسجد میں اکٹھے ہونے سے روکنے کیلئے سرینگر میں کرفیو جیسی پابندیاں عائد کی گئی تھیں۔ حریت فورم کے چیئر مین میر واعظ عمر فاروق نے جو ہر جمعہ کو مسجد میں خطبہ دیتے ہیں کو جمعرات کی شام کو ہی گھر میں نظربند کردیا گیا تھا ۔ میر واعظ نے ٹویٹر پر جا ر ی ایک پیغام میں کہا رواں سال 18ویں مرتبہ انتظامیہ نے جامع مسجد میں نماز جمعہ ادا کرنے نہیں دی ، محبوبہ مفتی نے اپنے پیشروؤں کی راہ پر چلتے ہوئے مسلمانوں کو جامع مسجد میں نمازجمعہ اداکرنے سے روک دیا اور شہر خاص میں پابندیاں عائد کر دیں۔ واضح رہے مشترکہ حریت قیادت نے گزشتہ دس دن کے دوران بھارتی فورسز کے ہاتھوں شہریوں خاص طورپر خواتین کے قتل کیخلاف نماز جمعہ کے بعد احتجاجی مظا ہر و ں کی کال دی تھی ۔

مزید : علاقائی

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...