پاکستان میں اسلامی سربراہی کا نفرنس بلائی جائے، اسرائیل کیخلاف اعلان جہاد کیا جائے، تحفظ قبلہ اول کاروں سے مقررین کا خطاب

پاکستان میں اسلامی سربراہی کا نفرنس بلائی جائے، اسرائیل کیخلاف اعلان جہاد ...

لاہور( ایجوکیشن رپورٹر)دفاع پاکستان کونسل کے زیر اہتمام مرکز اقصیٰ مین جی ٹی روڈ سے شیرانوالہ باغ تک تحفظ قبلہ اول کارواں سے خطاب کرتے ہوئے مذہبی و سیاسی جماعتوں کے قائدین نے کہا ہے کہ پاکستان میں اسلامی سربراہی کانفرنس بلائی جائے۔ مسلم حکمران متحد ہو کر اسرائیل کیخلاف اعلان جہاد کریں۔ پاکستان کا ایٹم بم اسلام کی جاگیر ہے‘مقبوضہ بیت المقدس کی آزادی کیلئے اسے بھی چلانا پڑے تو دریغ نہیں کرنا چاہیے۔ ملک کے کونے کونے میں جاکر لوگوں کو فلسطین و کشمیر کی آزادی کیلئے متحد اوربیدار کریں گے۔ 29دسمبر کو لیاقت باغ راولپنڈی میں بڑی تحفظ بیت المقدس کانفرنس ہو گی۔ جنرل اسمبلی میں امریکہ کو بدترین شکست ہوئی‘امریکی ڈومور سے جان چھڑانے کا یہ بہترین موقع ہے۔ حکمران پورے عالم اسلام اور انصاف پسند دنیا کو متحد کریں۔ اسی سے داعش جیسی تنظیموں اور خودکش حملوں کا فتنہ ختم ہو گا۔ قراردادوں سے مسئلے حل نہیں ہوں گے۔ مقبوضہ بیت المقدس کی آزادی کیلئے فیصلہ کن اقدامات کئے جائیں۔گوجرانوالہ میں قبلہ اول کارواں سے امیر جماعۃالدعوۃ پاکستان پروفیسر حافظ محمد سعید، پروفیسر حافظ عبدالرحمن مکی، حافظ اسعد محمود سلفی، چو دھری عمران یوسف گجر، نصر اللہ گل، احسان اللہ، گلزار احمد آزاد، نصیر اویسی، سلیم زاہد قادری، محمد قاسم خاں ایڈووکیٹ، حافظ شاہد منیر،عبدالرزاق بٹ و دیگر نے خطاب کیا۔ حافظ محمد سعید نے کہاکہ ٹرمپ کے اعلان نے بہت بڑا راستہ کھول دیا ہے۔ اسلامی سربراہی کانفرنس منعقد کی جائے اپاکستان کا ایٹم بم اسلام کی جاگیر ہے۔ بیت المقدس کی آزادی کیلئے اسے بھی چلانا پڑے تو گریز نہیں کرنا چاہیے۔ 29دسمبر کو راولپنڈی میں بڑی تحفظ بیت المقدس کانفرنس ہو گی پروفیسر حافظ عبدالرحمن مکی نے کہاکہ ٹرمپ کی طرف سے مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیلی دارالحکومت تسلیم کرنے کا اعلان درحقیقت اسرائیل کے صفحہ ہستی سے مٹ جانے کا اعلان ہے کشمیر و فلسطین کے مسلمانوں کو جلد بھارت و اسرائیل سے آزادی ملے گی۔ حافظ اسعد محمود سلفی،تحریک انصاف کے رہنماچو دھری عمران یوسف گجر جمعیت علما ئے پاکستان کے ڈپٹی سیکرٹری جنرل نصیر اویسی، گوجرانوالہ بار ایسوسی ایشن کے صدر نصر اللہ گل،مسلم لیگ کے فنانس سیکرٹری احسان اللہ، گلزار احمد آزاد، سلیم زاہد قادری، محمد قاسم خاں ایڈووکیٹ، حافظ شاہد منیر،عبدالرزاق بٹ و دیگر نے بھی خطاب کیا۔

مزید : صفحہ آخر