پارٹیاں ٹویٹ اور ٹکرز کے ذریعے نہیں چلائی جاتیں : چودھری نثار

پارٹیاں ٹویٹ اور ٹکرز کے ذریعے نہیں چلائی جاتیں : چودھری نثار
 پارٹیاں ٹویٹ اور ٹکرز کے ذریعے نہیں چلائی جاتیں : چودھری نثار

اسلام آباد (آئی این پی) پاکستان مسلم لیگ (ن) کے رہنما و سابق وفاقی وزیر داخلہ چودھری نثار علی خان نے کہا ہے کہ پارٹیاں ٹویٹ اور ٹکرز کے ذریعے نہیں چلائی جا تیں اور نہ ہی غیر سیاسی لوگوں کے فیصلے مسلط ہونے سے پارٹیوں کی ساکھ بہتر ہوتی ہے، مسلم لیگ (ن) بطور سیاسی اور حکمران جماعت ایک انتہائی نازک دور سے گزر رہی ہے، اس وقت جوش سے زیادہ ہوش سے فیصلے کرنے کی اشد ضرورت ہے اور ان فیصلوں کے پیچھے سیاسی مشاورت کی بھی اتنی ہی اشد ضرورت ہے، ذاتی طور پر تصادم کی پالیسی کے خلاف ہوں کیونکہ ہمیں اپنی تمام تر توجہ سیاسی مخالفین کو بے نقاب کرنے پر رکھنی چاہئے اور غیر ضروری تنازعات میں الجھنے سے گریز کرنا چاہیے،شہباز شریف کی آئندہ وزیراعظم کے امیدوار کے طور پر نامزدگی کا فیصلہ تب ہی مثبت ثابت ہو سکتا ہے اگر انہیں ان کی سوچ اور صلاحیت کے مطابق کام کرنے دیا جائے ۔وہ گزشتہ روزپنجاب ہاؤس میں میڈیا سے غیر رسمی گفتگو کر رہے تھے۔ چودھری نثار علی خان نے کہاکہ کوئی بھی سیاسی کارکن عدلیہ مخالفت تحریک کا حصہ بننے کا سوچ بھی نہیں سکتا۔چودھری نثار علی خان نے کہا کہ مسلم لیگ (ن) صرف ایک سیاسی پارٹی ہی نہیں بلکہ ایک جمہوری پارٹی بھی ہے اور مجھے ہمیشہ اس بات کا اطمینان ہی نہیں خوشی بھی رہی کہ اس پارٹی میں اظہار رائے کی جتنی آزادی ہے وہ کسی اور پارٹی میں نہیں ہے اورشاید میرا مسلم لیگ (ن) کے ساتھ تقریباً33 سال کی رفاقت کی بنیاد بھی یہی ہے مگر میں یہ بھی سمجھتا ہوں کہ اسی آزادی اظہارکی رائے کے حوالے سے جتنی آج ضرورت ہے کبھی نہیں تھی۔

چودھری نثار

مزید : صفحہ اول

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...