مقبوضہ کشمیر،مظاہروں پر پابندیاں آسیہ اندرابی،یاسین ملک گرفتار علی گیلانی اور میر واعظ نظر بند

مقبوضہ کشمیر،مظاہروں پر پابندیاں آسیہ اندرابی،یاسین ملک گرفتار علی گیلانی ...

سری نگر(آن لائن)مقبوضہ کشمیر میں کٹھ پتلی انتظامیہ نے لوگوں کوبھارتی فوجیوں کے ہاتھوں نہتے شہریوں کے حالیہ بہیمانہ قتل کیخلاف نماز جمعہ کے بعد احتجاجی مظاہرے کرنے سے روکنے کیلئے پابندیاں عائد کر دیں ۔میڈیارپورٹ کے مطابق مظاہروں کی کال سیدعلی گیلانی ، میر واعظ عمر فاروق اور محمد یاسین ملک پرمشتمل مشترکہ حریت قیادت نے دی تھی جس کا مقصد بھارتی فورسز کی طرف سے کشمیریوں کی جبری گرفتاریوں اوران کے خلاف جاری دیگر مظالم کی مذمت کرنا بھی ہے ۔پابندیاں رعناواری ، نوہٹہ ، خانیار ، مہاراج گنج ، صفاکدل ، مائسمہ اور کرال کھڈ پولیس سٹیشنوں کی حدود میں آنیوالے علاقوں میں عائد کی گئی ہیں۔انتظامیہ نے لوگوں کو مظاہرے کرنے سے روکنے کیلئے سرینگر سمیت مقبوضہ علاقے کے تمام بڑے قصبوں میں بھارتی فوجیوں اور پولیس اہلکاروں کی بڑی تعداد کو بھی تعینات کردیاہے ۔ ادھر بھارتی پولیس نے جموں وکشمیر لبریشن فرنٹ کے چیئرمین محمد یاسین ملک کے گھر پر چھاپہ مار کر انہیں گرفتار کر لیا ۔ انہیں سرینگر سینٹرل جیل منتقل کردیا گیا ہے ۔ انتظامیہ نے میر واعظ عمرفاروق کو بھی گھر میں نظربند کردیا ہے جبکہ سید علی گیلانی پہلے ہی 2010سے مسلسل گھر میں نظربند ہیں۔انتظامیہ نے وادی کشمیر کے بارہمولہ قصبے اور جموں کے بانیہال قصبے کے درمیان ٹرین سروس بھی معطل کر دی ۔دوسری جانب سرینگر کی عدالت نے دلائل مکمل ہونے پر دختران ملت کی چیئرپرسن آسیہ اندرابی کو ریاستی حراست سے آزاد کرنے کا حکم جاری کیا تھا جس پر انہیں فوری طور پر رہا کر دیا گیا لیکن کچھ ہی دیر بعد عدالت سے پولیس نے انہیں دوبارہ گرفتار کرلیا۔ آسیہ اندرابی نے اپریل میں بھارتی مظالم کے خلاف خواتین کی تحریک چلائی تھی اور بھارتی فوج نے انہیں 26 اپریل کو گرفتار کرکے ریاستی حراست میں دے دیا تھا۔

مقبوضہ کشمیر

مزید : صفحہ اول

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...