میونسپل کارپوریشن ڈیرہ،1سال بعد اجلاس چیئرمینوں کا شدید احتجاج ،میئر ساتھیوں سمیت واک آؤٹ

میونسپل کارپوریشن ڈیرہ،1سال بعد اجلاس چیئرمینوں کا شدید احتجاج ،میئر ...

ڈیرہ غازیخان (سٹی رپورٹر،نمائندہ خصوصی)میو نسپل کارپوریشن ڈیرہ غازیخان کااجلاس ایک سال بعد منعقدہوا ،اپوزیشن کی جانب سے یونین کونسلوں میں عملہ صفائی نہ دینے اور میئرکی جانب سے امتیازی سلوک برتنے پر زبردست احتجاج ،ہاتھوں میں جھاڑو اٹھاکر اجلاس کے دوران ہال (بقیہ نمبر18صفحہ12پر )

میں جھاڑو دیناشروع کردی،حکومتی بنچوں کی جانب سے ایجنڈے کے مطابق کنوینئر کے ہاؤس نہ چلانے اور خاتون ممبر کے بارے میں اپوزیشن رکن کی جانب سے نازیباالفاظ ادا کرنے پرعلامتی واک آؤٹ،کوئی منانے نہ گیاجس پر اجلاس ختم کرناپڑا۔تفصیل کے مطابق میونسپل کارپوریشن ڈیرہ غازیخان کا اجلاس جناح ہال میں منعقد ہوا جس میں متفقہ رائے سے ملک فہیم کو کنویئر منتخب کرلیاگیاجس کے بعد منتخب کنوینئر نے اجلاس کی کاروائی شروع کرائی ، اجلاس میں میونسپل کارپوریشن کے چیف آفیسر میاں محمدعثمان،میونسپل آفیسر Rچوہدری محمدارشد،میونسپل آفیسر انفراسٹکچر ایاز شاہ اور پرسنل سٹاف آفیسر محمدصدیق پتافی نے شرکت کی،اجلاس تلاوت کلام پاک اور نعت رسول مقبول ؐ سے شروع کیاگیاجس کے بعد کنوینر نے ممبران کو باری باری خطاب کاموقع دیا،اپوزیشن ارکان نے میئر شاہد حمید خان چانڈیہ کی سخت مخالفت کرتے ہوئے انہیں نااہل قرار دیااور ڈیرہ غازیخان میں صفائی نہ ہونے اور توڑ پھوڑ کاذمہ دار قرار دیا،ظفر مستوئی نے کہاکہ یہ کمرہ اجلاس کیلئے ایک سال بعد کھلاہے میئر قرآن پر حلف دیں کہ اس سے پہلے کوئی اجلاس ہواہے تو میں معافی مانگ لوں گامیری یونین کونسل سے عملہ صفائی ہٹادیے گئے صفائی کی صورتحال ابترہوچکی ہے انہوں نے سوال کیاکہ کیامیری یونین کونسل ڈیرہ غازیخان کاحصہ نہیں ہے ،اپوزیشن کے سرورصدیقی نے کہاکہ اجلاس تلاوت کلام پاک سے شروع ہوتاہے اور یہاں بیٹھے ممبران جھوٹ بولنے میں شرم محسوس نہیں کرتے کلمہ تک پڑھ کراپنے قول سے پھرجاتے ہیں ،چار مرتبہ ایم این اے حافظ عبدالکریم سے کہاہے کہ اپنے میئر کوسمجھائیں کہ شہرمیں صفائی کیلئے کام کرے ہم ان کے ساتھ جھاڑو دینے کیلئے تیار ہیں لیکن انہوں نے کہاکہ کئی مرتبہ کہہ چکاہوں ،اب نئے چیف آفیسر آئے ہیں ہمیں ان سے بہت سی توقعات ہیں ،ناظم بزدار نے اپنے خطاب میں کہاکہ اجلاس ایک سال بعد ہواہے میری یونین میں نہ صفائی ہے نہ سیوریج والا بندہ موجود ہے نیاچیف آفیسر آیاہے شاہد کچھ اچھاہوجائے اس پر کنویئنر نے کہاکہ صفائی کی تصویریں تو آپ روزانہ فیس بک پر لگاتے ہیں پھریہ صفائی کہاں سے ہوتی ہے اس پر ناظم بزدار کوئی معقول جواب نہ دے سکے، سید عمران شاہ نے کہاکہ گزشتہ دنوں مئیرکے خلاف عدم اعتماد کی تحریک کی اکثریت کو اقلیت میں تبدیل کردیاگیاجس کے ذمہ دار موجودہ ایم پی اے حنیف پتافی،سابقہ وزیراعلی پنجاب سردار دوست محمدخان کھوسہ اور سابق ایم این اے موجودہ سینیٹر حافظ عبدالکریم ہیں ،گٹرمیں بوریاں ڈالنے کاہم پر الزام ہے،ہمیں ڈرانے دھمکانے کیلئے ماضی میں ہمارے ارکان کے گھروں میں پولیس بھیجی گئی،یہ زیادتی مئیر شاہد حمیدخان چانڈیہ اور ڈپٹی میئر شیخ اسرار نے کی تھی،حکومتی بنچوں کی جانب سے احمدحسن ایڈووکیٹ نے کہاکہ اجلاس پہلے بھی ہوچکاہے مختصر اجلاس تھا صفائی نہ ہونے کے معاملے پر انہوں نے کہاکہ اپوزیشن والے ہمیں فیل کرنے کیلئے سیوریج مین ہولز میں ریت کی بوریاں ڈلوارہے ہیں یہاں آکر صفائی کاشور مچاتے ہیں ، شیخ نقیب نے کہاکہ اگر پچھلے ایک سال میں اجلاس نہیں ہواتو گزشتہ اجلاس کیلئے اپوزیشن ارکان نے معاوضہ کس چیز کیلئے لیاتھا اجلاس کے پیسے بھی وصول کرتے ہیں اور شور بھی مچاتے ہیں کیایہ عوام کے ساتھ دھوکانہیں ہے اس پر اپوزیشن ارکان نے جھوٹ ہے کاشور مچادیاتو کنوینئر نے کہاکہ ریکارڈ نکلوالیاجائے گاتاکہ تصدیق ہوسکے،حاجی خدابخش نے اجلاس کے دوران اپنی باری پر اپوزیشن رکن عمران شاہ کی جانب سے زاتیات برتنے پر زبردست مذمت کی ،اس دوران میئرشاہد حمید خان چانڈیہ نے کنوینئر کوکہاکہ ہاؤس کو ایجنڈے کے مطابق نہیں چلایاجارہااور ہمارے ایک رکن کے خلاف اپوزیشن کی جانب سے نازیبا زبان استعمال کی گئی جس پر انہوں نے اپنے ساتھیوں سمیت اجلاس سے علامتی واک آؤٹ کرلیا،اپوزیشن ارکان نے اس پر شورمچایاکہ ہمارے سوالوں کے جواب دو،لیکن میئر اپنے ساتھیوں سمیت ہال سے باہر چلے گئے ۔ کنوینئر نے اس پر سخت برامناتے ہوئے کہاکہ میئرکو اپنے ساتھیوں سمیت واپس آنا چاہیے اور ایوان سے معافی مانگنا چاہیے ۔ یہ پہلاموقع ہے کہ حکومتی ارکان نے اجلاس سے واک آؤٹ کرلیا۔تھوڑی دیر کے بعد اپوزیشن ارکان نے دفتر کے باہر جھاڑو دینا شروع کردی بعدازاں شورشرابے کے بعد اجلاس ختم کرلیا گیا ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر