عوام میں پائی جانیوالی محرومی کا ازالہ کرینگے ،شوکت یوسفزئی

عوام میں پائی جانیوالی محرومی کا ازالہ کرینگے ،شوکت یوسفزئی

پشاور(سٹاف رپورٹر)شانگلہ کو ترقی یافتہ اور ماڈل ضلع بنانے کے لئے دن رات کام کریں گے اور یہاں کے لوگوں میں پائے جانے والے تمام محرومیوں کا خاتمہ کریں گے گزشتہ تیس سالوں میں یہاں پر باریاں لینے والوں نے جان بوجھ کر شانگلہ کو پسماندہ رکھا اور یہاں کا تر ترقیاتی فنڈہڑپ کیا، ہم عوام کا پیسہ عوام کی بہتری کے لئے بروئے کار لائیں گے۔ ان خیالات کا اظہار صوبائی وزیر اطلاعات اور ڈیڈک چیئرمین شوکت یوسفزئی نے شانگلہ میں ڈیڈک کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔ اجلاس میں ڈپٹی کمشنر شانگلہ فیاض شیرپاؤ اور ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر مقبول کے ساتھ ساتھ شانگلہ کے تمام لائن افسس کے نمائندوں نے شرکت کی۔ اجلاس میں لائن افسس کے نمائندوں نے اداروں کے کارکردگی اور مسائل پر صوبائی وزیر اطلاعات اور ڈیڈک چیرمین کو بریفنگ دی صوبائی وزیر نے اداروں کو ہدایت کی کہ عوام کے فلاح و بہبود اور ترقی کے لئے تمام وسائل بروئے کار لائیں اور عوام کو تمام تر سہولیات ان کی دہلیز پر پہنچانے کے لئے کام کریں۔ شوکت یوسفزئی نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت اداروں کی مضبوطی پر یقین رکھتی ہے اس لئے تمام تر اداروں کو سیاسی اثر و رسوخ سے آزاد کیا ہے اب اداروں کی ذمہ داری ہے کہ عوام کے مسائل کے حل میں کوتاہی نہ کریں اور انہیں بروقت حل کرنے کی کوشش کریں۔ترقیاتی کاموں میں معیار کے حوالے سے بات کرتے ہوئے صوبائی وزیر نے کہا کہ کسی بھی کام میں معیار پر کوئی سمجھوتہ نہیں ہوگا اورترقیاتی کام مقررہ مدت میں مکمل کر کے عوام کو ریلیف دیں، تاخیری حربے استعمال کرنے والوں کے خلاف قانونی کارروائی عمل میں لائی جائے گی اور ٹھیکیداروں کو بلیک لسٹ کیا جائے گا۔زراعت اور فشریز میں موجود مواقع کے بارے میں دونوں محکموں کی طرف سے شوکت یوسفزئی کو بتایا گیا کہ یہاں پر بہترین قسم کے باغات اور فشریز کے لیے سازگار ماحول ہے صوبائی وزیر نے دونوں محکموں کو یقین دلایا کہ حکومت ان محکموں کی ہر قسم کی سرپرستی کرے گی کیونکہ ان دونوں محکموں میں مزید بہتری کی وجہ سے شانگلہ میں بیروزگاری پر بھی کافی حد تک قابو پا لیا جائے گا۔اداروں کو درپیش مسائل اور مشکلات کے حل کیلئے صوبائی وزیر نے یقین دلایا کہ کوشش کریں گے کہ جلد از جلد اداروں کے تمام مسائل اور مشکلات حل ہو جائیں اور جہاں سٹاف کی کمی ہو پورا کیا جائے گا تاکہ لوگوں کو تبدیلی کے ثمرات جلدی ملے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر