لنڈی کوتل ،ٹیکنیکل کالج کم شلمان تاحال فعال نہ ہوسکا

لنڈی کوتل ،ٹیکنیکل کالج کم شلمان تاحال فعال نہ ہوسکا

خیبر ( عمران شنواری ) لنڈی کوتل گورنمنٹ کم شلمان ٹیکنیکل کالج 2001 میں تعمیر کیا گیا تھا لیکن تاحال اس کو کارآمد اور فعال نہیں بنایا جاسکا گزشتہ سترا سالوں میں اس کو شروع نہیں کیاجا سکاحالانکہ لنڈیکوتل کے دور افتادہ او رپسماندہ علاقے کم شلمان میں اس ٹیکنیکل کالج کی تعمیر پر اس وقت مبینہ طورپرایک کروڑ اکتیس لاکھ روپے کی لاگت آئی تھی 2001 میں اس وقت کے متعلقہ حکام نے شلمان ٹیکنیکل کالج کو اس غرض سے تعمیر کیا تھا کہ لنڈی کوتل اور ضلع خیبر کے تمام علاقوں سے مختلف ہنر سیکھنے کے لئے طلباء اور نوجوان یہاں آکر داخلے لیں گے اور یہاں سے فارغ ہو کر عملی زندگی میں کچھ سیکھ کر جائیں گے اور اپنے خاندان والوں کی کفالت کا ذریعہ بنیں گے لیکن اس وقت کے متعلقہ ذمہ دار حکام کی غفلت اور لا پرواہی اور بد قسمتی سے اس ٹیکنیکل کالج کو نہ تو ابھی تک شروع کرنے کے لئے ہنر مند اور کوالیفائڈ اساتذہ کی ٹیم فراہم کی گئی اور نہ ہ اس حوالے سے علاقے کے لوگوں میں شعور بیدار کرنے کے لئے کوئی آگاہی مہم چلائی گئی جس سے ابھی تک علاقے کے نوجوان اور ہنر سیکھنے کے خواہشمند طلباء داخلے لے سکے اس ٹیکنیکل کالج کے متعلق لنڈیکوتل کے باخبر لوگوں کی رائے ہے کہ اس وقت کے حکام بالا نے اس کی فیزیبیلیٹی اور جگہ کی موضوعیت کے بارے میں کوئی سوچ بچار نہیں کیا تھا اور نہ اس حوالے سے علاقے کے عمائدین سے کوئی رائے لی تھی جس کی وجہ سے اس سے کوئی فائدہ نہیں لیا جا سکا اور ایک نامناسب جگہ پر اس کو تعمیر کیا گیا تھا علاقے کے لوگوں کا یہ بھی کہنا ہے کہ شاید کیک بیکس اور کمیشن کی خاطر اس وقت کے حکام بالا نے عجلت میں اس نا مناسب جگہ پر ٹیکنیکل کالج کو تعمیر کیا تھا یہاں کے لوگوں کا یہ بھی کہنا ہے کہ نیب اس ٹیکنیکل کالج کی غیر فعالیت اور بے کار پڑا رہنے کی سبب معلوم کر کے ذمہ دار آفسران کے خلاف انکوائری کریں کم شلمان ٹیکنیکل کالج کی جگہ کے معائنے کے وقت معلوم ہوا کہ ابھی تک اس کالج پر چوکیداروں کو تنخواہیں تو دی جاتی ہیں لیکن عملاً اس سے کوئی مقامی باشندہ مستفید نہیں ہو سکا جس پر لوگوں نے افسوس کا اظہار کیا ہے اسلسلے میں پاکستان تحریک انصاف کے کے لنڈیکوتل کے صدر ضرب اللہ عرف حاجی بابا اور پریس سیکرٹری عظمت علی شینواری نے بتا یا کہ ٹیکنیکل کالج جو گز شتہ کئی سالوں سے بند ہیں لنڈیکوتل اور شلمان کے عوام جلد خوشخبری سنیں گے انہوں نے کہا کپ پاکستان تحریک انصاف نے اس بارے میں بہت کام کیا ہے اور اب اس کالج کو فعال کرکے شروع کرنے کا وقت آگیا ہے

مزید : پشاورصفحہ آخر