پی اے سی کا افتتاحی اجلاس ، نیب ، ا یف آئی اے نمائندے بھی طلب

پی اے سی کا افتتاحی اجلاس ، نیب ، ا یف آئی اے نمائندے بھی طلب

اسلام آباد(صباح نیوز)پارلیمنٹ کی پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کے نومنتخب چیئرمین شہباز شریف نے پی اے سی کے تین روزہ افتتاحی اجلاس میں نیب اور ا یف آئی اے کے نمائندوں کو بھی طلب کر لیا، اجلاس کا باقاعدہ طور پر شیڈول جاری کرتے ہوئے نیب اور ایف آئی اے کو بھی اجلا س کے نوٹسز بھجوا دیئے گئے، اجلاس 28 دسمبر سے 1جنوری2019 تک پارلیمنٹ ہاؤس میں ہوگا اور پروڈکشن آرڈر جاری ہونے پر شہباز شریف اجلاس کی صدارت کریں گے اس بارے میں فائل پی اے سی کے ایڈیشنل سیکرٹری نے سیکرٹری نیشنل اسمبلی کے توسط سے سپیکر قومی اسمبلی کو بھیج دی ۔ تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز پارلیمنٹ کی پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کے تین روزہ افتتاحی اجلاس کا شیڈول جاری کر دیاجس میں وزا ر ت توانائی سے بریفنگ طلب کرنے سمیت نیب،ایف آئی اے، منصوبہ بندی ترقی، قانون و انصاف،پاکستان انجینئرنگ کونسل، وزار ت خزانہ کے نمائندوں کو بھی مدعو جبکہ اجلاس سے سینٹ سیکرٹری کو بھی آگاہ کر دیا گیا ہے۔ اجلاس میں 28 دسمبر کو پی اے سی ونگ کی طر ف سے سالانہ حسابات کی جانچ پڑتال کے بارے میں بریفنگ دی جائے گی۔یادرہے پی اے سی کو سال 2016-17ء کے سالانہ حسا با ت کی 80 آڈٹ رپورٹس موصول ہو گئی ہیں ،31 دسمبر کو آڈیٹر جنرل پاکستان ،یکم جنوری کو سیکرٹری وزارت توانائی بریفنگ دینگے ۔اے پی سی کے ارکان میں وفاقی وزیر خزانہ بنائے پر عہدہ جبکہ سید فخر امام، نصر اﷲ دریشک ریاض فتیانہ ،عامر ڈوگر منزہ حسن، نور عالم خان، خواجہ شیر از محمود، راجہ ریاض احمد ،اعجاز احمد شاہ ،سینیٹر شبلی فراز، خواجہ آصف، سردار ایاز صادق، رانا تنویر، شیخ روحیل اصغر ،سینیٹر مشاہد سید ، راجہ پرویز اشرف،نوید قمر ،طارق حسین،حناء ربانی کھر ،سینیٹر شیری رحمن، سردار اختر مینگل ، شاہدہ اختر علی ،سینیٹر طلحہ محمود ، اقبال محمد علی خان اور دیگر جماعتو ں کے ارکان شامل ہیں۔

اے پی سی اجلاس

مزید : کراچی صفحہ اول