وفاقی وزیر فیصل واوڈا مہران یونیورسٹی کی کانووکیشن کی تقریب میں ایسا لباس پہن کر آ گئے کہ سوشل میڈیا پرہنگامہ برپاہو گیا

وفاقی وزیر فیصل واوڈا مہران یونیورسٹی کی کانووکیشن کی تقریب میں ایسا لباس ...
وفاقی وزیر فیصل واوڈا مہران یونیورسٹی کی کانووکیشن کی تقریب میں ایسا لباس پہن کر آ گئے کہ سوشل میڈیا پرہنگامہ برپاہو گیا

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن )فیصل واوڈا اپنے دبنگ سٹائل کے باعث عوام میں شہرت رکھتے ہیں اور وہ کسی بھی وقت اپنی بڑی سی موٹرسائیکل پر چڑھتے ہیں اور شہر کا چکر لگانے کیلئے نکل جاتے ہیں جبکہ ان کی سیکیورٹی گاڑیوں پر ان کے پیچھے پیچھے چل رہی ہوتی ہے ۔

فیصل واوڈا کا ایک دبنگ انداز اس وقت بھی سامنے آیا جب کراچی میں واقع چینی قونصل خانے پر حملہ ہوا تو وہ بندوق لے کر موقع پر پہنچ گئے جبکہ انہوں نے بلٹ پروف جیکٹ بھی زیب تن کی ہوئی تھی ۔

فیصل واوڈا کی یہ تصویر سوشل میڈیا پر آئی تو شدید وائرل ہو گئی اور انہیں خوب تنقید کا بھی سامنا کرنا پڑا جس کا فیصل واوڈا نے بھی بھر طریقے سے جواب دیتے ہوئے کہا کہ اگر دہشتگرد دوبارہ آئے تو وہ دوبارہ بھی ایسا ہی کریں گے اور بزدلوں کی طرح گھر نہیں بیٹھیں گے ۔

تاہم آج فیصل واوڈا کی ایک اور ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہو گئی ہے جس میں وہ ایک پھٹی ہوئی جینز پہن کر یونیورسٹی کے کانووکیشن کی تقریب میں شریک ہیں اور طلبہ میں ڈگریاں بانٹتے ہوئے دکھائی دیئے ۔

یہ تقریب کراچی کی مہران یونیوسٹی میں ہوئی جہاں فیصل واوڈ اور گورنر سندھ عمران اسماعیل کو بطور مہمان خصوصی مدعو کیا گیا تاہم فیصل واوڈا وہاں پہنچے تو طلبہ ان کی پھٹی ہوئی جینز دیکھ کر حیران رہ گئے ۔

تاہم اس سے قبل کسی بھی ایسے موقع پر وفاقی وزراءکی جانب سے ایسی ڈریسنگ سامنے نہیں آسکی ہے ۔فیصل واوڈا کی جینز کی پینٹ دراصل پھٹی نہیں ہوئی بلکہ یہ لیوائس کا سٹائل ہے ۔ تاہم فیشن ہی صحیح لیکن انہیں اب اس پر بھی تنقید کا سامنا کرناپڑ رہاہے ۔

مزید : قومی