والدہ کے انتقال پر فاروق ڈار کو پیرول پر رہا نہ کر کے بھارت نے انسانی حقوق کی بد ترین خلاف ورزی کی:مشتاق منہاس

والدہ کے انتقال پر فاروق ڈار کو پیرول پر رہا نہ کر کے بھارت نے انسانی حقوق کی ...
والدہ کے انتقال پر فاروق ڈار کو پیرول پر رہا نہ کر کے بھارت نے انسانی حقوق کی بد ترین خلاف ورزی کی:مشتاق منہاس

  

مظفر آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)آزادجموں وکشمیر کے وزیر اطلاعات و سیاحت مشتاق منہاس نے بھارت کی جانب سے حریت رہنماء4 فاروق احمد ڈار کو ان کی والدہ کی نماز جنازہ میں شرکت کیلئے پیرول پر رہا نہ کرنے کے اقدام کی شدید ترین الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ بھارت نے فاروق ڈار کو پیرول پر رہا نہ کر کے انسانی حقوق کی شدید ترین خلاف ورزی کی ہے،بھارت کی قید میں حریت رہنماؤں نے جرات اور بہادری کی وہ داستانیں رقم کیں جنہیں قلم لکھنے اور زبان بیان کرنے سے قاصر ہے۔

راجہ مشتاق منہاس نے کہا کہ حریت رہنماء4 فاروق احمد ڈار عرصہ دراز سے بھارتی جیلوں میں بند تحریک آزادی کے ایک مجاید کی حیثیت سے جرات و بہادری کی تاریخ رقم کر رہے ہیں،جدوجہد آزادی کشمیر میں کشمیریوں نے جو قربانیاں دی ہیں تاریخ میں اس کی مثال نہیں ملتی۔انہوں نے کہا کہ بھارت کی جمہوریت اور بھارتی حکمرانوں پر سو بار لعنت بھیجتے ہیں جس نے ایک بیٹے کو اپنی ماں کا جنازہ نہیں اٹھانے دیا،دنیا کا کوئی بھی معاشرہ اس بے حسی کی انتہا تک نہیں جا سکتا جسقدر بھارتی فوج اور بھارت کی حکومت نے دکھائی ہے۔انہوں نے بھارتی ظلم کی شدید ترین الفاظ میں مذمت کرتے ہوے کہا کہ حریت لیڈر فاروق  ڈار کے والد محترم بھی بستر مرگ پر ہیں مگر بھارت کی عدالتیں اور بھارت کی حکومت ٹس سے مس نہیں ہو رہی، کشمیریوں کی تحریک آزادی بھارت کے ظلم وجبر سے اور تیز ہو گی جس تحریک میں 18 ماہ کی حبا کے آنکھوں کا نور اور 14 سال کے بچے کا لہو شامل ہو جائے اس تحریک کو کامیابی سے کوئی نہیں روک سکتا۔وزیر اطلاعات نے انسانی حقوق کے عالمی اداروں سے اپیل کی کہ وہ بھارت کی انسانیت دشمن کارروائیوں اور اقدامات کا نوٹس لیں اور بھارت کو انسانی قدروں کا احساس دلائیں جو کہ مکمل طور پر کشمیری خور ریاست بن چکا ہے۔

مزید : علاقائی /آزاد کشمیر /مظفرآباد