کپاس کی پیداوار بڑھانے کا میگا منصوبہ تیار

  کپاس کی پیداوار بڑھانے کا میگا منصوبہ تیار

  



اسلام آباد(آن لائن)وزارت نیشنل فوڈ سکیورٹی اینڈ ریسرچ نے کپاس کی پیداوار بڑھانے کا میگا منصوبہ تیار کر لیا۔ 80 لاکھ گانٹس سے بڑھا کر 2 کروڑ گانٹس تک پیداوار لے جانے کی تیاریاں شروع کر دی  گئی ہیں۔ یہ منصوبہ پنجاب میں  چولستان‘ سندھ میں تھرپارکر اور بلوچستان کے علاقوں میں شرو ع کیا جائے گا۔ اس منصوبے کے تحت کاشتکاروں کو منظور شدہ بیج کی فراہمی اور پانی کے سسٹم کے لئے خصوصی فنڈز قائم کئے جائیں گے۔اس حوالے سے وزارت کی طرف سے پاکستان ایگری کلچر ریسرچ کونسل کو کپاس کی پیداوار میں اضافے کے لئے بیج کی نئی ورائٹیاں تیار کرنے کی ہدایات جاری کر دی گئی ہیں۔تفصیلات کے مطابق ملک میں گزشتہ کئی برسوں سے کپاس کی پیداوار میں مسلسل کمی کو روکنے کے لئے وزارت نیشنل فوڈ اینڈ سکیورٹی ریسرچ نے گنا‘ چاول ا ور گندم کے بعد اب کپاس کی پیداوار میں اضافے کے لئے بہت بڑا منصوبہ شرو ع کرنے کے فیصلہ کیا ہے۔ اس حوالے سے کاٹن کمشنر اور پی اے آر سی کی سفارشات کی روشنی میں منصوبہ بندی شروع کر دی گئی ہے کیونکہ پاکستان کی نسبت بھارت میں کپاس کی پیداوار میں اضافہ ہوا ہے جبکہ پاکستان کو کپاس کی پیداوار میں مسلسل کمی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔جس کی وجہ سے حالیہ منصوبہ لانے کی تیاریاں کی جا رہی ہیں۔ جس کے تحت پاکستان کے تینوں صوبوں بلوچستان‘ پنجاب اور سندھ کے مختلف علاقوں میں کپاس کی کاشت کو فروغ دیا جائے گا۔سندھ میں تھرپارکر کے علاقے جبکہ پنجاب کے چولستان کے علاقوں میں بہت ساری زمینیں ایسی ہیں جہاں پر کپاس کی کاشت کی جا سکتی ہیں اور کپاس کی پیداوار بڑھانے کے لئے حکومت یہ منصوبہ تیار کر رہی ہے جس کے تحت کپاس کی پیداوار کو 80 لاکھ گانٹس سے بڑھا کر 2 کروڑ گانٹس تک لے جانے کا ٹارگٹ مقرر کیا گیا ہے۔ اس منصوبے کے تحت جن علاقوں میں پہلے فصلیں کاشت نہیں کی گئیں ان علاقوں میں کپاس کی کاشت کی جائے گی اور پیداوار 30 سے 40 ایکڑ رقبے تک حاصل ہونے کی توقع ہے۔

 #/s#۔(جاوید/ طارق ورک)

مزید : کامرس


loading...