کاشتکاروں کو چارہ جات سے نقصان رساں کیڑوں کے بروقت انسداد کی ہدایت

کاشتکاروں کو چارہ جات سے نقصان رساں کیڑوں کے بروقت انسداد کی ہدایت

  



فیصل آباد(اے پی پی):محکمہ زراعت کے ترجمان نے زمینداروں اور کاشتکاروں کو ہدائت کی ہے کہ وہ ربیع کے چارہ جات برسیم، لوسرن، جئی وغیرہ کو مختلف نقصان رساں کیڑوں کے حملہ سے محفوظ رکھیں تا کہ فصل کو تباہی سے بچانے کے ساتھ ساتھ کاشتکاروں کو بھی مالی نقصان سے بچایا جاسکے۔ انہوں نے بتایاکہ کونپل کی مکھی کونپل میں داخل ہو کراسے شدید نقصان پہنچاتی ہے جس سے کونپل سوکھ جاتی ہے۔

 انہوں نے کہاکہ لشکری سنڈی اور امریکن سنڈی پتوں کو کھا کر چارہ کی فصل کو نقصان پہنچاتی ہے جس سے فی ایکڑ پیداوار پر برا اثر پڑتاہے۔انہوں نے کہا کہ سفید مکھی فصل کا رس چوستی ہے جس سے فصل پیلاہٹ کا شکار ہو جاتی ہے جبکہ تھرپس کے بالغ اور بچے پتوں سے رس چوستے ہیں جس سے فصل کی بڑھوتری متاثر ہوتی ہے۔انہوں نے کہا کہ نقصان رساں کیڑوں کے بروقت انسداد کیلئے فصل کو جڑی بوٹیوں سے پاک رکھا جائے۔ انہوں نے مزید کہاکہ کاشتکار دوست کیڑوں اور پرندوں کی حوصلہ افزائی کریں اور حملہ شدہ کھیتوں کے ارد گرد مناسب زہر کا دھوڑا کریں۔ 

مزید : کامرس


loading...