گیس کی قیمت میں 200 فیصد اضافہ منی بجٹ، واپس لیا جائے‘خواجہ حبیب

گیس کی قیمت میں 200 فیصد اضافہ منی بجٹ، واپس لیا جائے‘خواجہ حبیب

  



لاہور(این این آئی)ایران پاک فیڈریشن آف کلچر اینڈ ٹریڈ کے صدر خواجہ حبیب الرحمان نے کہا ہے کہ گیس کی قیمت میں 200 فیصد سے زائد اضافہ منی بجٹ ہے جبکہ صنعتوں کوسپلائی کی معطلی سے ایکسپورٹ میں ایک ارب ڈالر کمی ہو گی،ہزاروں افراد بے روز گار ہوں گے، حکومت فیصلے پر نظر ثانی کرتے ہوئے قیمت میں اضافے کا فیصلہ فوری واپس لے، بڑھتی مہنگائی کی وجہ سے پٹرولیم اور گیس کی قیمتوں میں اضافہ معمول بن چکا ہے جس کی وجہ سے کم آمدنی والے طبقے کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے کیونکہ پٹرولیم اور گیس کی قیمتوں میں اضافہ اپنے ساتھ مہنگائی کا ایک طوفان لاتا ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے ایف پی سی سی آئی کے انتخابات میں یو بی جی کے نامزد صدارتی امیدور ڈاکٹرنعمان ادریس بٹ کے اعزاز میں منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا کہ ملکی معیشت کی تیز تر ترقی کے لئے حکومت نے جو اقدامات کئے ہیں اسکے ثمرات تاحال عام آدمی تک نہیں پہنچے لیکن ان کے حوصلہ افزا نتائج بین الاقوامی سطح پر تسلیم کئے جا رہے ہیں، شرح سود میں اضافے کے بعد کاروبار کے حالات اچھے نہیں ہیں، ملک کی 38فیصد آبادی کثیر جہتی غربت کا شکار ہے، مجموعی معاشی صورتحال بہتر بنانے کیلئے حکومت کے متنوع اقدامات خوش آئند ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ معاشی اقدامات کو نتیجہ خیز بنانے کیلئے ضروری ہے کہ مختلف طبقات میں مکمل فکری ہم آہنگی کیلئے کام کیا جائے کیونکہ ایک متحد اور منظم قوم ہی پیش آمدہ مشکلات و مسائل پر کامیابی سے قابو پا سکتی ہے۔

مزید : کامرس