پنجاب بھر میں شدید دھند اور سردی سے معمولات زندگی منجمد،حادثات،2جاں بحق، 20زخمی

  پنجاب بھر میں شدید دھند اور سردی سے معمولات زندگی منجمد،حادثات،2جاں بحق، ...

  



  لاہور، شیخوپورہ،سمبڑیال،مانوالہ،الپوری، کوئٹہ(مانیٹرنگ ڈیسک،بیورو رپورٹ،ایجنسیاں) پنجاب کے مختلف علاقوں میں شدید دھند نے ڈیرے ڈال لئے،جس کے باعث معمولات زندگی شدید متاثر ہوئے ہیں،دھند کے باعث ٹریفک حادثات میں بھی اضافہ ہوا ہے۔ حد نگاہ 50 میٹر تک ہونے کی وجہ سے موٹر وے کو کئی اہم مقامات پر ہر قسم کی ٹریفک کے لئے بند کردیا گیا۔ جب کہ دھند میں کمی تک کئی ایئرپورٹس سے اندرون ملک پروازیں بھی منسوخ کردی گئی ہیں۔لودھراں، رکن پور، رحیم یارخان، بہاولنگر، وہاڑی اور دیگر کئی مقامات پر دھند کے باعث ٹریفک حادثات رونما ہوئے ہیں۔ جس کے باعث 20 سے زائد افراد زخمی بھی ہوئے۔ملکی اور غیر ملکی 15پروازیں تاخیرکا شکار جبکہ 9 منسوخ کر دی گئیں۔ گزشتہ روز متعدد ٹرینیں گھنٹوں تاخیر کا شکار رہیں۔لاہور سے کراچی جانے والی جناح ایکسپریس ڈیڑھ گھنٹہ،لاہور سے کراچی جانے والی قراقرم ایکسپریس دو گھنٹے،لاہور سے کراچی جانے والی بزنس ایکسپریس ساڑھے تین گھنٹے،لاہور سے کوئٹہ جانے والی اکبر ایکسپریس ایک گھنٹہ،لاہور سے کراچی جانے والی کراچی ایکسپریس ساڑھے تین گھنٹے،لاہور سے کراچی جانے والی شاہ حسین ایکسپریس ڈیڑھ گھنٹہ جبکہ فیصل آباد سے کراچی جانے والی ملت ایکسپریس پونے تین گھنٹے تاخیر کا شکار رہیجس کی وجہ سے مسافروں کو سرد موسم میں شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔دریں اثنا شیخوپورہ میں فیصل آبادروڈ چٹی کوٹھی کے قریب تیزرفتارٹرک نے موٹرسائیکل سواروں کوکچل ڈالاحادثہ کے نتیجہ میں باپ بیٹاجاں بحق اہلیہ شدیدزخمی ہوگئی۔ بتایاگیاہے کہ لیاقت اپنے بیٹے آفتاب اوراہلیہ کیساتھ ننکانہ سے اپنے عزیز سے ملنے جا رہے تھے کہ چٹی کوٹھی کے قریب تیزرفتارٹرک نے ان کوکچل ڈالا۔ جان بحق افراد محمودآبادضلع ننکانہ کے رہائشی تھے،زخمی خاتون کی حالت بھی نازک بیان کی جاتی ہے۔حادثہ کے بعد ٹرک ڈرائیور فرار ہونے میں کامیاب ہو گیا جسے پولیس تلاش کر رہی ہے،ادھرسمبڑیال میں دھند کے باعث رکشہ الٹنے سے 4 مسافر جزوی طورپر زخمی۔ تفصیلا ت کے مطابق سیالکوٹ وزیرآباد روڈ پر علی الصبح ساہووالہ سے سمبڑیال آرہا تھا کہ نہراپر چناب کے قریب شدید دھند کے باعث روڈ سے نیچے کھڈے میں گر گیا جس کے باعث دوخواتین سیماں بی بی،سکینہ بی بی اورڈرائیور محمد فیصل سمیت محمد مشتاق جزوی طورپر زخمی ہوگئے۔ محکمہ موسمیات کے مطابق وادی کوئٹہ سمیت بلوچستان کے مختلف علاقوں میں سردی کی شدت برقرار رہے گی۔ زیارت میں کم سے کم درجہ حرارت منفی8ڈگری سینٹی گریڈ،قلات میں کم سے کم درجہ حرارت منفی7ڈگری سینٹی گریڈ،دالبندین میں کم سے کم درجہ حرارت منفی2ڈگری سینٹی گریڈ،ژوب میں 1اورپنجگور میں درجہ حرارت2ڈگری سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا محکمہ موسمیات کے مطابق 28دسمبر تک شدید سردی کا امکان ہے۔شا نگلہ وادی میں خشک سردی کی شدت میں اضافہ۔بالائی علاقوں میں برف جمنے سے نظام زندگی متاثر۔سوختی لکڑی کی قلت عوام کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔سرکاری و نجی تعلیمی ادارے آج سے بند۔ شانگلہ میں تیز ہواہوں سے سردی کی شدت میں ایک بار پھر نمایاں اضافہ۔ درجہ حرارت میں کمی آئی ہے۔ خشکسردی سے اکثر علاقوں میں پانی کی شدید قلت پیدا ہوچکی تھی، چشمے، ندیاں اور دریاؤں میں پانی کی مقدار بہت کم پڑچکا تھا۔ محکمہ موسمیات کے پیشگوئی کے مطابق ائندہ تین دن تک بارش اور برفباری کا امکان ہے۔

دھند،سردی

مزید : صفحہ اول


loading...