نواز شریف کو دوبارہ وزیر اعظم بننے کا کوئی لالچ نہیں:مسلم لیگ (ن)

  نواز شریف کو دوبارہ وزیر اعظم بننے کا کوئی لالچ نہیں:مسلم لیگ (ن)

  



سوات(مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) مسلم لیگ ن نے گزشتہ روز خیبرپختونخوا میں پاور شو کا مظاہرہ کیا، سوات  کے علاقے خوازہ خیلہ میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے مرکزی رہنما احسن اقبال نے کہا کہ نوازشریف کو دوبارہ وزیراعظم بننے کا کوئی لالچ نہیں، پاکستان کے دشمنوں نے سی پیک کو نقصان پہنچایا، ملک میں امن لانے کا کریڈٹ پاک فوج کو جاتا ہے. احسن اقبال نے کہا ہماری حکومت نے ملک کی ترقی کیلئے کام کیا، انتہا پسندی ختم کرنے کا سہرا نوازشریف اور پاک فوج کو جاتا ہے۔ ہم نے 500 ارب پاک فوج کو دے کر 20 سال سے جاری جنگ ختم کی اور نیشنل ایکشن پلان کے ذریعے انتہا پسندی کو شکست دی۔ احسن اقبال نے کہا ہے کہ ناکام حکمران پاکستان کی سلامتی کے لیے خطرہ بن چکے ہیں، وقت آگیا ہے کہ سلیکشن کی بجائے الیکشن کے ذریعے حکومت لائی جائے۔ عمران خان دنیا کے سے بڑے بھکاری وزیراعظم بن چکے ہیں،   انہوں نے مہاتیر محمد سے وعدہ کرکے پھر یوٹرن لے لیا، وزیراعظم نے پاکستان کو اتنا کمزور کیا کہ مودی نے کشمیر پر قبضہ کرلیا۔پی ٹی آئی حکومت پر کڑی تنقید کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ عمران خان کو پیسہ دے کر پاکستان کی ترقی کاراستہ روکا گیا ہے، آج یہ  فارن فنڈنگ کا حساب کیوں نہیں دیتے؟۔۔جلسے سے خطاب میں انہوں نے کہا  کہ سی پیک کے ذریعے ملک میں ساڑھے اٹھائیس ارب کے منصوبے لائے اور شمالی علاقہ جات کو شامل کیا پاکستان کے سابق وزیراعظم شاہد خان عباسی کو سزائے موت کی کوٹھڑی میں رکھا گیا تاہم ن لیگ کے قائدین نیب انتقام کے باوجود ملک کی خاطر ڈٹ کر کھڑے ہیں۔سابق وزیرداخلہ نے کہا کہ مسلم لیگ پاکستان کی ماں ہے اور اسی نے ملک کو مضبوط کیا ہے، غربت اور بیروزگاری ختم کرنا ہے تو قائداعظم کا راستہ اختیار کرنا ہوگا۔ نیازی حکومت پاکستان کی معیشت اور مفادات کے لئے خطرہ بن چکی ہے،2020 الیکشن کا سال ہے، بہت جلد عوام کو ان نالائق اور نا اہل حکمرانوں سے نجات مل جائے گی، حکمرانوں کی جانب سے جھوٹ پر پردہ ڈالتے ڈالتے ملکی معیشت اور قوم کا دیوالیہ نکالا جارہا ہے غربت اور بیروزگاری ختم کرنا ہے تو قائداعظم کا راستہ اختیار کرنا ہوگا، سوات میں سوئی گیس، خواتین یونیورسٹی اور بجلی کے اربوں روپے کے منصوبے مسلم لیگ ن کا کارنامے ہیں،پی ٹی آئی  والے ہمارے دور کے منصوبوں پر تختیاں لگا رہے ہیں،موجودہ حکومت نے چکدرہ ٹو کالام اور خوازہ خیلہ ٹو بشام ایکسپریس وے جو ہمارے دور میں منظور ہوئے تھے اور دو سال پی ایس ڈی پی میں فنڈ بھی مختص کی گئی جنہیں تبدیلی سرکار نے ختم کرکے شانگلہ اور سوات کے عوام کیساتھ بڑی زیادتی کی ہے،۔ جلسہ عام سے سابق وفاقی وزیر سردار یوسف، ممبر قومی اسمبلی ڈاکٹر عباداللہ، سابق ایم پی اے قیموس خان، ایم پی اے سردار خان، سابق ناظم سوات محمد علی شاہ، سید حبیب علی شاہ، جلات خان اور دیگر نے بھی خطاب کیا۔

مسلم لیگ ن 

مزید : صفحہ اول


loading...