سرکاری ہسپتالوں میں پتھالوجی سروسز کی نجکاری کیلئے سروے کا فیصلہ

سرکاری ہسپتالوں میں پتھالوجی سروسز کی نجکاری کیلئے سروے کا فیصلہ

  



ملتان (وقائع نگار))محکمہ سپیشلائزڈ ہیلتھ کئیر اینڈ میڈیکل ایجوکیشن پنجاب کی ہدایت پر سرکاری ٹیچنگ ہسپتالوں میں پتھالوجی سروسز(لیبارٹریوں، تشخیصی ٹسٹوں کی سہولیات)کی نجکاری کے لئے سروے کرنے کی غرض سے نشتر میڈیکل یونیورسٹی و ہسپتال انتظامیہ نے فوکل پرسن نامزد کردیا ہے۔گرینڈ ہیلتھ الائنس نے نشتر لیب کی نجکاری کی مخالفت کردی ہے۔شعبہ پتھالوجی کے بائیو کیمسٹ محمد سلیمان سعید نشتر میڈیکل یونیورسٹی و ہسپتال کی جانب سے فوکل پرسن ہوں گے۔جنہیں شعبہ پتھالوجی کے سربراہ/چیئر (بقیہ نمبر27صفحہ12پر )

پرسن پروفیسر ڈاکٹر خالد عثمان نے فوکل پرسن نامزد کیا ہے۔لیبارٹریوں میں دستیاب تشخیصی سہولیات کا جائزہ و سروے کرنے والی پرائیویٹ کمپنی میسرز یو ایچ وائی حسن نعیم اینڈ کمپنی کی جانب سے مینیجر فہد کامران اور اسسٹنٹ مینیجر اسامہ عطائ الرحمن فوکل پرسن ہوں گے۔یہ نجکاری(آوٹ سورس)محکمہ پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ کئیر پنجاب کے زیر انتظام مختلف ہسپتالوں کی پتھالوجی سروسز(لیبارٹریوں) کی طرز پر کی جائے گی۔جسکے لئے پرائیویٹ کمپنی نشتر ہسپتال ملتان سمیت مختلف ٹیچنگ ہسپتالوں کے شعبہ پتھالوجی میں دستیاب تشخیصی ٹسٹوں کی سہولیات کا جائزہ لینے کے لئے سروے کرے گی۔محکمہ سپیشلائزڈ ہیلتھ کئیر اینڈ میڈیکل ایجوکیشن پنجاب نے ٹیچنگ ہسپتالوں کی انتظامیہ کو ہدایت کی ہے کہ پرائیویٹ کمپنی سے سروے کے حوالے سے مکمل تعاون کیا جائے۔دریں اثنائ گرینڈ الائنس ملتان نے نشتر ہسپتال لیب کی مجوزہ نجکاری کی شدید مذمت کی ہے۔جی ایچ اے نے حکومت پنجاب اور نشتر انتظامیہ کو تنبیہ کی ہے کہ سرکاری ہسپتال میں غریب عوام کا علاج کیا جاتا ہے۔

فوک پرسن

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...