نشتر میڈیکل یونیورسٹی ‘ سیکرٹریٹ کا پی سی ون کاغذوں میں دفن

  نشتر میڈیکل یونیورسٹی ‘ سیکرٹریٹ کا پی سی ون کاغذوں میں دفن

  



ملتان (وقائع نگار)نشتر میڈیکل یونیورسٹی کے قیام کے بعد کروڑوں روپے کی لاگت سے تیار ہونے والا سیکرٹریٹ کا پی سی ون کاغذوں میں دفن ہوکر رہ گیاہے۔جبکہ نشتر میڈیکل یونیورسٹی انتظامیہ کی جانب سے علیحدہ وی سی دفتر کی تزئین وآرائش مکمل کرنے پر اسکو فعال کرلیا گیا ہے۔ذرائع سے معلوم ہوا ہے نشتر میڈیکل کالج کو میڈیکل یونیورسٹی کا درجہ ملے تقریبا دو سال ہوچکے۔مگر تاحال(بقیہ نمبر29صفحہ12پر )

اسکو اپنی انتظامی امور نمٹانے کیلئے دفتر نہیں مل سکا ہے۔جسکی وجہ سے نشتر ہسپتال کے نرسنگ سکول کی بلڈنگ کو خالی کرواکر وہاں لاکھوں روپے سے تزئین و آرائش کا کام مکمل کیا گیا یے۔اور سابق نشتر میڈیکل کالج کے آفس سے شفٹ ہوکر نشتر نرسنگ کی بلڈنگ میں وائس چانسلر آفس منتقکل کردیا گیا ہے۔حالانکہ ذرائع کے مطابق پرو وائس چانسلر پروفسیر ڈاکٹر احمد اعجاز مسعود نے کے جب وی سی کے عہدے کا اضافی چارج تھا۔تو انہوں اس دوران وائس چانسلر آفس کیلئے علیحدہ سے سیکرٹریٹ بنانے کا فیصلہ کیا تھا۔جسکو پایا تکمیل دینے کیلئے انہوں نے نشتر کی کوٹھی نمبر کو ایک کو میڈیکل یونیورسٹی کا آفس بنانے کا پی سی ون تیار کروایا۔جسکو منظور کیلئے اقدامات کیئے گئے مگر نامعلوم وجوہات کی بناءپر نیا تعمیر ہونے والا وہ سی آفس (سیکٹرٹریٹ ) کا پی سی ون منظور نہ ہوسکے۔جسکی وجہ سے امورمتاثر ہو رہے ہیں۔نشتر ہسپتال کے پروفسیر۔ڈاکٹرز اور ملازمین نے صحت کے اعلی حکام سے مذکورہ صورت حال پر فوری نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔جبکہ نشتر میڈیکل یونیورسٹی انتظامیہ کے مطابق نئے سیکٹرٹریٹ کا پی سی ون تیار ہونے کے بعد منظوری کے پراسس میں ہے۔جیسے ہی نیا وائس چانسلر آفس تیار ہوگا۔جلد آفس میں شفٹ ہوجائے گا۔

دفن

مزید : ملتان صفحہ آخر