عدالت نے ارشد استرانہ کو مزید سلیکشن کمیٹیاں بنانے سے روکدیا‘ حکم امتناعی جاری 

عدالت نے ارشد استرانہ کو مزید سلیکشن کمیٹیاں بنانے سے روکدیا‘ حکم امتناعی ...

  



ڈیرہ اسماعیل خان(بیورو رپورٹ)ہائی کورٹ ڈیرہ اسماعیل خان بینچ نے ارشد استرانہ کو مزید سلیکشن کمیٹیاں بنانے اور بھرتیاں کرنے سے روکتے ہوئے حکم امتناعی جاری کر دیا۔ تفصیلات کے مطابق گرینڈ ہیلتھ الائنس کو چیئرمین کے پی کے، پی ڈ ی اے کے پی کے سینئر نائب صدرڈاکٹر محمد رضوان راجپوت نے ایم ٹی آ ئی ڈیرہ کے بورڈ آف گورنر ز کی جانب سے کی جانے والی  غیر قانونی بھر تیوں اور اختیار کیے گئے طریقہ کار کے خلاف معروف قانون دان سلیم اللہ رانازئی ایڈووکیٹ کی وساطت سے ڈیرہ ہائی کورٹ بینچ میں رٹ پٹیشن دائر کی  تھی کہ جس میں کہا گیا کہ چیئرمین بی او جی ارشد استرانہ کے پاس سلیکشن کمیٹیاں بنانے اور بھرتیوں کا اختیار نہیں ہے جس پر عدالت نے بورڈ آف گورنرزکے چیئرمین ارشد استرانہ کو مزید سلیکشن کمیٹیاں بنانے اور بھرتیوں سے روکتے ہوئے حکم امتناعی جاری کردیا۔اس حوالے سے ڈاکٹر محمد رضوان  کا میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہہ بہت جلد جنرل کیڈ ر سے ٹیچنگ کیڈ ر میں غیر قانونی طور پر تبدیل شدہ پوسٹوں کے خلاف بھی عدالتی کاروائی شروع ہو جائیگی۔ ارشد استرانہ نے اپنے بندوں کو نوازنے کے لئے میرٹ کی جو دھجیاں اڑا ئی ہیں اور ٹانک کے حلقہ کے ایم پی اے کے کہنے پر ڈیرہ کے لوکل ڈاکٹر ز کو نظر انداز کرکے ایم پی اے کے رشتہ دار کو گا ئنی کی سینئر رجسٹر ا ر لیا۔ڈاکٹر محمد رضوان نے کہا کہ انہوں نے قسم کھائی ہے سچائی سامنے لانے کی اور ایم ٹی آ ئی کی کرپشن بے نقاب کریں گے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...