ضلع بنوں کی سپورٹس تنظیموں نے ریجنل سپورٹس آفیسر کے خلاف طبل جنگ بجادیا 

ضلع بنوں کی سپورٹس تنظیموں نے ریجنل سپورٹس آفیسر کے خلاف طبل جنگ بجادیا 

  



بنوں (بیورو رپورٹ)ضلع بنوں کی سپورٹس تنظیموں نے ریجنل سپورٹس آفیسر کے خلاف طبل جنگ بجادیا اور ریجنل سپورٹس آفیسر امیر زاہد شاہ کے تبادلے کا مطالبہ کردیا تبادلہ نہ ہونے کی صورت میں احتجاجی تحریک شروع کرنے کی دھمکی دیدی،جبکہ انڈر21گیمز میں احجاجاًبازؤں پر کالی پٹیاں باندھنے کا اعلان کیا اس سلسلے میں  احتجاج کے بعدہنگامی احتجاجی جلاس منعقد کیا گیا جسمیں وکلاء برادری کی جانب سے شاہ فیاض ایڈوکیٹ اور عابد خان ایڈوکیٹ نے بھی خصوصی شرکت کی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ضلعی سپورٹس ایسوسی ایشن کے صدر پیر برکت علی،سابق سپورٹس آفیسر ملک حبیب اللہ خان،جنرل سیکرٹری محمد نظام الحق،اسرار بنگش،ملک رفاقت علی خان،برکت علی،محمد ظریف،نصیب الرحمن،اسد اللہ ودیگر مقررین نے سپورٹس آفیسر کا کام کھلاڑیوں کی خوصلہ افزائی اور کھیلوں کی ترقی کیلئے اقدامات کرنا ہوتا ہے لیکن افسوس کہ بنوں کے ریجنل سپورٹس آفیسر امیر زاہد شاہ کھیل اور کھلاڑ ی دشمن پالیسیوں پر گامزن ہے انکی نااہلی کی وجہ سے کھیلوں کے کئی بڑے منصوبے اور سپورٹس کمپلیکس واپس ہوئے تاریخ میں پہلی مرتبہ کھلاڑیوں سے غیر قانونی  گراؤنڈ فیس وصول کی جاتی ہے جو کہ صوبے تو کیا پورے پاکستان میں بھی کسی ضلع میں وصول نہیں کی جاتی ہے جبکہ بدلے میں نہ تو کھلاڑیوں کو ٹارنامنٹس کے انعقاد میں کسی قسم کی مالی امداد دی جاتی ہے نہ ہی کسی قسم کی سہولیات دی اجاتی ہیں صرف آفسران کو خوش کرنے کیلئے جو مقابلے منعقد کرتے ہیں فنڈز انہی کھیلوں پر خرچ کرتے ہیں جبکہ گراؤنڈ فیس تمام کھیلوں کے کھلاڑیوں سے وصول کرتے ہیں انہوں نے وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا،صوبائی وزیر کھیل،ڈی جی سپورٹس اور سیکرٹری سپورٹس خیبر پختو نخوا سے مطالبہ کیا کہ ریجنل سپورٹس آفیسر امیر زاہد شاہ کو فوری طور پر بنوں سے تبدیل کیا جائے اور گراؤنڈ فیس کے نام پر ماہانہ جمع کئے جانے والے ہزاروں روپے کے فنڈز کا اڈٹ کیا جائے کہ یہ رقم کہاں اور کس طرح خرچ کی جاتی ہے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر