وہ معروف میسجنگ ایپ جو دراصل متحدہ عرب امارات کی حکومت نے آپ کی جاسوسی کے لیے بنائی ہے، تہلکہ خیز انکشاف منظر عام پر

وہ معروف میسجنگ ایپ جو دراصل متحدہ عرب امارات کی حکومت نے آپ کی جاسوسی کے لیے ...
وہ معروف میسجنگ ایپ جو دراصل متحدہ عرب امارات کی حکومت نے آپ کی جاسوسی کے لیے بنائی ہے، تہلکہ خیز انکشاف منظر عام پر

  



نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) ٹوٹوک (ToTok)نامی میسجنگ ایپلی کیشن بظاہر محفوظ چیٹنگ کے لیے بنائی گئی ہے لیکن درحقیقت یہ ایپلی کیشن جاسوسی کا ایک ہتھیار ہے جس کے ذریعے متحدہ عرب امارات کی حکومت لوگوں کو جاسوسی کرتی ہے۔ یہ انکشاف امریکی حکام نے کیا ہے اور نیویارک ٹائمزنے بھی اس پر انویسٹی گیشن کرکے اس کی تصدیق کی ہے۔ اخبار نے اپنی رپورٹ میں بتایا ہے کہ ”اس ایپلی کیشن پر ٹیکسٹ یا ویڈیو کے ذریعے آپ اپنے دوستوں اور فیملی کے لوگوں سے بات کرسکتے ہیں اور تصاویر شیئر کر سکتے ہیں۔ تاہم اس پر ہونے والی کسی بھی طرح کی گفتگو محفوظ نہیں ہے بلکہ ایک ایک ٹیکسٹ میسج، ویڈیو اور تصویر کی اماراتی حکومت نگرانی کرتی ہے۔“

اخبارکے مطابق متحدہ عرب امارات کی حکومت صرف اس ایپلی کیشن پر ہونے والی گفتگو ہی کی نگرانی نہیں کرتی بلکہ جو لوگ یہ ایپلی کیشن اپنے فون میں انسٹال کرتے ہیں ان کے فون تک حکومت کے لوگوں کو رسائی حاصل ہو جاتی ہے کیونکہ یہ ایپلی کیشن ایک سپائی ویئر ہے۔ چنانچہ اسے انسٹال کرنے کے بعد وہ اپنے فون پر جس قسم کی سرگرمی بھی کرتے ہیں وہ متحدہ عرب امارات کی حکومت کی نظروں میں ہوتی ہے۔ یہ ایپلی کیشن ابھی چند ماہ قبل ہی متعارف کروائی گئی ہے اور اب تک اسے مشرق وسطیٰ، یورپ، ایشیائ، افریقہ اور نارتھ امریکہ سمیت دنیا بھر میں کروڑوں لوگ اپنے فونز میں انسٹال کر چکے ہیں۔ گزشتہ ہفتے یہ ایپ امریکہ میں سب سے زیادہ ڈاﺅن لوڈ کی جانے والی ایپلی کیشنز میں شامل تھی۔ یہ ایپلی کیشن ایپل اور گوگل ایپ سٹورز پر دستیاب ہے۔

مزید : عرب دنیا


loading...