’4 جنگیں انڈیا ، 2 بلوچستان ، ایران سے، تربت سے ، ہر ملک سے ہمارا مشرف صاحب کو فتح ہے‘ پرویز مشرف کے حق میں مظاہرہ، جذباتی کارکن کے بیان سے سوشل میڈیا پر ہنسی کا طوفان آگیا

’4 جنگیں انڈیا ، 2 بلوچستان ، ایران سے، تربت سے ، ہر ملک سے ہمارا مشرف صاحب کو ...
’4 جنگیں انڈیا ، 2 بلوچستان ، ایران سے، تربت سے ، ہر ملک سے ہمارا مشرف صاحب کو فتح ہے‘ پرویز مشرف کے حق میں مظاہرہ، جذباتی کارکن کے بیان سے سوشل میڈیا پر ہنسی کا طوفان آگیا

  



کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) سابق صدر پرویز مشرف کے خلاف سنگین غداری کیس کا فیصلہ آنے کے بعد ان کے حق میں کچھ شہروں میں مظاہرے کیے گئے۔ ایسا ہی ایک مظاہرہ کراچی پریس کلب کے باہر بھی ہوا جہاں ایک کارکن اتنا جذباتی ہوگیا کہ اس نے پرویز مشرف کے کھاتے میں وہ جنگیں بھی ڈال دیں جو کبھی ہوئی ہی نہیں ۔

آل پاکستان مسلم لیگ کی جانب سے کراچی پریس کلب کے باہر مظاہرہ کیا گیا جس میں خصوصی عدالت کے فیصلے کے خلاف اور پرویز مشرف کے حق میں نعرے بازی کی گئی۔ اسی مظاہرے میں شریک ایک جذباتی کارکن جذبات کی رو میں اتنا زیادہ بہہ گیا کہ اسے پتا ہی نہیں چلا کہ وہ کون کون سی جنگوں کا کریڈٹ سابق صدر کو دیتا جارہا ہے۔

اے پی ایم ایل کے جذباتی کارکن نے کہا ’4 جنگ لڑا ہے انڈیا سے، 2 بلوچستان سے، ایران سے، تربت سے ، ہر ملک سے ہمارا مشرف صاحب کو فتح ہے اور فتح رہنا چاہیے ، نامنظور نہیں ہونا چاہیے مشرف صاحب کیلئے ، میں اپنے 4 بچے بھی مشرف صاحب کیلئے قربان کردوں گا۔‘

جذباتی کارکن کا مزید کہنا تھا کہ ’جنگ کرکے پاکستان کو بچایا، اسلام اور حق کو زندہ رکھنے کیلئے ہمیں مشرف صاحب چاہیے۔ پاکستان میں پاک فوج ہے ہمارا، ہمیں اسلام چاہیے ، ہمیں مہنگائی نہیں چاہیے، اس سرزمین میں صرف مشرف چاہیے مجھے بس۔‘

اے پی ایم ایل کے اس جذباتی کارکن کے جذباتی بیان اور جذبات کے باعث سوشل میڈیا پر ہنسی کا ایک طوفان برپا ہے اور لوگ اس پر طرح طرح کے تبصرے کر رہے ہیں۔

مزید : ڈیلی بائیٹس