مشترکہ مفادات کونسل اجلاس، پانی کی منصفانہ تقسیم کیلئے کمیٹی قائم، اشیاءخورو نوش کی قیمتوں کاتعین وفاقی حکومت کرے گی

مشترکہ مفادات کونسل اجلاس، پانی کی منصفانہ تقسیم کیلئے کمیٹی قائم، ...
مشترکہ مفادات کونسل اجلاس، پانی کی منصفانہ تقسیم کیلئے کمیٹی قائم، اشیاءخورو نوش کی قیمتوں کاتعین وفاقی حکومت کرے گی

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) مشترکہ مفادات کونسل کے اجلاس میں پانی کی منصفانہ تقسیم پر کمیٹی قائم کردی گئی ہے ، تیل کی تلاش اور پیداوار کیلئے پالیسی کی منظوری بھی دے دی گئی ہے، اجلاس میں فیصلہ کیا گیا ہے کہ اشیا خور ونوش کی قیمتوں کاتعین وفاقی حکومت کرے گی۔

مشترکہ مفادات کونسل کے اجلاس کے بعد میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے معاون خصوصی برائے اطلاعات فردوس عاشق اعوان نے بتایا کہ اجلاس میں 23 نکاتی ایجنڈے پر غور کیا گیا۔ اجلاس میں پانی کی تقسیم کے معاملے پر اٹارنی جنرل نے سفارشات پیش کیں،وزیر اعظم نے پانی کی منصفانہ تقسیم یقینی بنانے کی ہدایت کی۔ اجلاس میں پانی کی تقسیم کے معاملے پر کمیٹی بنانے کا فیصلہ ہوا ہے جو ایک ماہ میں اپنی سفارشات پیش کرے گی۔ پانی کی منصفانہ تقسیم کیلئے ٹیلی میٹری نظام نصب کرنے کابھی فیصلہ ہوا ہے، 4 ہفتے میں جائزہ لے کر منصوبے کا پی سی ون تیار کیا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ توانائی منصوبے ہر صوبے کا حق ہیں،توانائی منصوبوں کی منظوری سے قبل نیپرا کو اعتماد میں لیا جائے گا،تکنیکی معاملات پرماہرین کی کمیٹی بنانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

صوبے ایک دوسرے سے متعلق تحفظات دور کریں گے،ایل این جی سے متعلق سندھ کے تحفظات دور کیے جا چکے ہیں۔ اجلاس میں تیل کی تلاش اور پیداوار کیلئے پالیسی کی منظوری دی گئی، اشیا خور ونوش کی قیمتوں کاتعین وفاقی حکومت کرے گی، وزیراعظم نے بنیادی مسائل کے تدارک کیلئے جامع پالیسی بنانے کی ہدایت کی ہے۔

مزید : اہم خبریں /قومی