پاک ایران معاہدہ اور مثبت اثرات!

پاک ایران معاہدہ اور مثبت اثرات!

پاک ایران گیس معاہدے کے بعد پاکستان میں ایل۔ پی۔جی کے نرخوں میں پندرہ روپے فی کلو کی کمی ہو گئی ہے، ہمارے سٹاف رپورٹر کے مطابق ابھی قیمت مزید کم ہونے کی توقع ہے جس کے بعد ایل۔ پی۔جی کے نرخ پٹرول اور ڈیزل کی نسبت چالیس فی صد تک کم ہو جائیں گے۔ رپورٹ کے مطابق اتنی کمی پہلی بار ہوئی اور اب گھریلو سلنڈر کی قیمت میں170 روپے اور تجارتی سلنڈر کے نرخ میں چھ سو پچاس روپے تک کمی ریکارڈ کی گئی ہے۔

پاکستان اور ایران کے درمیان گیس کا معاہدہ طویل عرصہ سے زیر التوا تھا جس پر گزشتہ دنوں اسلام آباد میں دستخط ہوئے۔ اس کے تحت ایران نے قرض دینے کا بھی فیصلہ کیا جبکہ ایران نے گوادر میں تیل کی ریفائینری لگانے کا بھی فیصلہ کیا ہے۔ زمین حکومت مہیا کرے گی اور باقی اخراجات ایران کی حکومت برداشت کرے گی۔ معاہدے پر عمل درآمد اور حتمی دستخطوں میں تاحال چند روز کی تاخیر ہے کہ ایران کے ماہرین امریکی پابندیوں کا جائزہ لے کر ایک مکمل دستاویز تیار کرنا چاہتے ہیں امریکہ نے اعتراض کیا ہے لیکن پاکستان نے اسے رد کردیا اور کہا کہ امریکہ کے تحفظات کے باوجود حکومت اپنے عزم پر قائم ہے کسی کو اس پر اعتراض نہیں ہونا چاہئے۔ معاہدے کے ابتدائی اثرات بڑے خوشگوار ہیںاور مزید بہتر نتائج دیں گے۔ گوادر پورٹ کو چین کے حوالے کرنے اور ایران سے گیس معاہدہ زرداری حکومت کے بڑے کارنامے ہیں جو امریکی ناراضگی کے علاوہ بعض مقامی قوتوں کی مخالفت مول لے کر بھی کئے گئے ہیں۔ بلوچستان کے بعض قوم پرست مخالفت کر رہے ہیں۔ لیکن قومی مفاد میں معاہدہ ہی بہتر جانا گیا ہے جس کے مثبت اثرات بھی ظاہر ہونا شروع ہو گئے ہیں۔ معاہدہ پر عمل درآمد سے اور بھی بہتری آئے گی توانائی کی قلت پر قابو پایا جا سکے گا۔ ایران اور پاکستان کے معاہدے کی ایک شق یہ بھی ہے کہ پاکستان قرض اجناس (چاول۔ گندم وغیرہ) کی شکل میں واپس کرے گا۔  ٭

مزید : اداریہ

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...