معاشی حکمت عملی تبدیلی نہ کی گئیتو ملک قرض کی دلدل مےں دھنس جائے گا

معاشی حکمت عملی تبدیلی نہ کی گئیتو ملک قرض کی دلدل مےں دھنس جائے گا

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) گورنر سٹیٹ بینک یاسین انور نے خبردار کیا ہے کہ ملک کی معاشی حکمت عملی تبدیل کرنے کی ضرورت ہے اگر ایسا نہ ہوا تو پاکستان قرض کے دلدل میں دھنستا جائے گا۔ اسلام آباد میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ فروری میں آئی ایم ایف کو مزید 39 کروڑ ڈالرواپس کرنا ہیں اور اس سے روپے کی قدر میں کمی نہیں ہوگی۔ان کاکہنا تھا کہ سٹیٹ بینک کی کوششوں سے روپے کی قدر کو سہارا ملا اور مرکزی بینک اس معاملے میں تماشائی نہیں بنا ہوا۔ تیل کی بین الاقوامی قیمتوں کے حوالے سے یاسین انور کا کہنا تھا کہ اگر خام تیل کی قیمت میں 5 ڈالر فی بیرل کمی آجائے تو سالانہ 75 کروڑ ڈالر کی بچت ہوسکتی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ترسیلات زر منگوانے کے لئے صرف اے ریٹنگ کمپنیاں ہی فعال رہیں گی اور بی ریٹنگ کمپنیوں کو یہ سہولت نہیں ملے گی۔

گورنر سٹیٹ بینک

مزید : صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...