بنگلہ دیش میں مذہبی جماعت پر پابندی کیخلاف مظاہرے ، چارکارکن شہید

بنگلہ دیش میں مذہبی جماعت پر پابندی کیخلاف مظاہرے ، چارکارکن شہید
بنگلہ دیش میں مذہبی جماعت پر پابندی کیخلاف مظاہرے ، چارکارکن شہید

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

ڈھاکہ(مانیٹرنگ ڈیسک) بنگلادیش میں ایک مذہبی جماعت پر پابندی کے حکومتی فیصلے کیخلاف مظاہروں کے دوران پولیس سے جھڑپوں میں چار کارکن شہید اور200سے زائد زخمی ہوگئے۔دارالحکومت ڈھاکہ سمیت سلہٹ ، بوگرا اور چٹاگانگ میں مظاہرے ہوئے اور ڈھاکہ کی مرکزی بیت المکرم مسجد کے اطراف کا علاقہ نماز جمعہ کے بعد میدان جنگ بنا رہا۔نماز کے بعد مختلف مذہبی تنظیموں کے کارکنوں نے احتجاج کرتے ہوئے شہرکے دیگرعلاقوں کی طرف بڑھنے کی کوشش کی۔اس دوران پولیس اور مشتعل مظاہرین کے درمیان شدید جھڑپیں ہوئیں اورلٹھ بردار مظاہرین نے پولیس پر پتھراﺅ کیا اور لاٹھیاں استعمال کیں۔پولیس نے مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے ربڑ کی گولیاں چلائیں اورکئی مظاہرین کو گرفتاربھی کرلیا۔

مزید : بین الاقوامی