تین برطانوی مسلمانوں پر دہشت گردی کا الزام ، عمر قید کا امکان

تین برطانوی مسلمانوں پر دہشت گردی کا الزام ، عمر قید کا امکان
تین برطانوی مسلمانوں پر دہشت گردی کا الزام ، عمر قید کا امکان

لندن (بیورورپورٹ) برطانیہ میں تین افراد کو دہشت گردی کی کارروائیوں میں ملوث ہونے پر عدالت نے مجرم قرار دے دیا ہے ۔انہیں اپریل یا مئی میں عمر قید کی سزا سنائے جانے کا امکان ہے۔ لندن کی وول وچ کراون کورٹ کے مطابق 31 سالہ عرفان نصیر، 27 سالہعرفان خالد اور 27 سالہ عاشق علی پر الزام تھا کہ انہوں نے 8 بم دھماکوں کی منصوبہ بندی کی تھی۔ استغاثہ کے مطابق ان افراد کا مصروف مقامات پر بم دھماکے کرنے کا ارادہ تھا جس میں یہ کامیاب ہو جاتے تو جولائی 2005 میں لندن دھماکوں سے زیادہ تباہی ہوتی۔ عدالت کوبتایا گیا کہ عرفان نصیر اور عرفان خالد نے دہشت گردی کی تربیت پاکستان کے قبائلی علاقوں میں حاصل کی جبکہ عاشق علی نے دہشت گردی کی تربیت کے لیے نوجوانوں کو اکٹھا کرنے کی ذمہ داری اٹھائی ۔عرفان نصیر پر دہشت گردی کے 5، عرفان خالد پر 4 اور عاشق علی پر 3 الزامات عائد کیے گئے تھے۔ برمنگھم سے تعلق رکھنے والے تینوں افراد نے خود پر لگائے گئے الزامات مسترد کردیے ہیں ۔برطانوی جج کے مطابق ان تینوں افراد کو عمر قید کی سزا سنائی جاسکتی ہے۔

مزید : بین الاقوامی

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...