مائیکروویو اُوون کیسے ایجاد ہوا؟اہم ترین ایجاد کے پیچھے چھپی انتہائی حیرت انگیز کہانی

مائیکروویو اُوون کیسے ایجاد ہوا؟اہم ترین ایجاد کے پیچھے چھپی انتہائی حیرت ...
مائیکروویو اُوون کیسے ایجاد ہوا؟اہم ترین ایجاد کے پیچھے چھپی انتہائی حیرت انگیز کہانی

  

سان فرانسسکو (نیوز ڈیسک) مائیکرو ویو اوون بظاہر تو نہایت جدید اور پیچیدہ مشین ہے لیکن اس کی ایجاد ناقابل یقین حد تک سادہ دریافت کے نتیجے میں ہوئی۔

مزید پڑھیں:کیا آپ یقین کر سکتے ہیں یہ موبائل فون کا کور ہے؟فیچرز انتہائی حیرت انگیز

سال 1945ءمیں طاقتور مائیکرو ویو شعاع کی حرارت پیدا کرنے کی صلاحیت اتفاقی طور پر دریافت ہوئی۔ پرسی سپینسر ایک امریکی انجینئر تھے جو رے تھیون نامی کمپنی میں کام کرتے تھے۔ وہ ایک راڈار سیٹ پر کام کررہے تھے اور اس دوران انہوں نے محسوس کیا کہ ان کی جیب میں پڑی ایک ٹافی پگھلنا شروع ہوگئی تھی۔ پرسی اس بات پر بہت حیران ہوئے اور جب انہوں نے کچھ غور و فکر کیا تو ان کے ذہن میں یہ بات آئی کہ ٹافی کے پگھلنے کی وجہ راڈار سے خارج ہونے والی مائیکروویو شعائیں ہوسکتی ہیں۔ پرسی نے اس نظریے کی تصدیق کے لئے مزید تجربات کئے جن میں پہلی دفعہ برقناطیسی شعاﺅں سے پاپ کارن تیار کئے گئے جبکہ ان شعاﺅں کی مدد سے دوسری تیار ہونے والی غذا ایک انڈا تھا جو تجربے کے دوران پھٹ گیا۔

مزید پڑھیں:’زمانہ قدیم ‘کے موبائل کی جدید دنیا میں واپسی

 سپینسر نے ایک دھاتی ڈبہ تیار کیا جس میں ایک میگنا ٹرون کے ذریعے کثیف مائیکرو ویو شعائیں داخل کی گئیں۔ اس ڈبے میں رکھی گئی غذا کا درجہ حرارت نہایت تیزی سے بڑھ گیا جس کے بعد اس بات کی تصدیق ہوگئی کہ مائیکرو ویو شعاﺅں کو کھانا پکانے کے لئے استعمال کیا جاسکتا ہے۔ کمپنی رے تھیون نے اکتوبر 1945ءمیں اس ایجاد کے حقوق حاصل کرلئے جبکہ عام لوگوں کے استعمال کے لئے مائیکرو ویو اوون پہلی دفعہ جنوری 1947ءمیں سامنے آیا۔

مزید :

سائنس اور ٹیکنالوجی -