لہور رنگ لائیگا،مظلوم کشمیری جلد بھارتی قید سے آزاد ہوں گے:شوبز شخصیات

لہور رنگ لائیگا،مظلوم کشمیری جلد بھارتی قید سے آزاد ہوں گے:شوبز شخصیات

  



لاہور(فلم رپورٹر)شوبز کے مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والی شخصیات ے مظلوم کشمیریوں سے بھرپور یکجہتی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ کشمیر کے بغیر پاکستان ادھورا ہے اور انشا اللہ وہ دن دور نہیں جب کشمیریوں کو بھارت کے غاصبانہ تسلط سے آزادی نصیب ہو گی،موجودہ حالات کے تناظر میں شوبز شخصیات نے بھارت کو خبردار کیا کہ وہ اپنے داخلی انتشار سے توجہ ہٹانے کیلئے کشیدگی بڑھانے جیسے بیانات کے ذریعے متنازعہ شہریت بل سے بین االاقوامی توجہ ہٹانے کی کوشش کر رہا ہے لیکن وہ یاد رکھے دفاع وطن کے لئے پوری قوم کے ساتھ ساتھ تمام فنکار برادری بھی اپنی بہادر مسلح افواج کی پشت پر ہے اگر بھارت نے کسی قسم کا مس ایڈونچر کی کوشش کی تو اسے بھرپور اور کرارا جواب ملے گا۔ اس موقع پر اقوام متحدہ کو بھی چاہئے کہ انسانیت کو بچانے کے لئے اپنا بھرپور کردار ادا کرے۔پاکستانی قوم اور حکومت کشمیر یوں کی آزادی کی جدوجہد میں شانہ بشانہ ہیں،جاوید شیخ،میلوڈی کوئین آف ایشیاء پرائڈ آف پرفارمنس شاہدہ منی،مدیحہ شاہ،صائمہ نور،میگھا،ماہ نور،یار محمد شمسی صابری،سہراب افگن،ظفر اقبال نیویارکر،عذرا آفتاب،عینی طاہرہ،عائشہ جاوید،میاں راشد فرزند،سٹار میکر جرار رضوی،ملک طارق،مجید ارائیں،طالب حسین،قیصر ثنا ء اللہ خان،مایا سونو خان،عباس باجوہ،مختار چن،آشا چوہدری، اسد مکھڑا،وقا ص قیدو، ارشدچوہدری،چنگیز اعوان، حسن مراد،حاجی عبد الرزاق،حسن ملک،عتیق الرحمن،اشعر اصغر،آغا عباس،صائمہ نور،خالد معین بٹ،مجاہد عباس،ڈائریکٹر ڈاکٹر اجمل ملک، صومیہ خان،حمیرا چنا،اچھی خان،شبنم چوہدری،محمد سلیم بزمی،سفیان،انوسنٹ اشفاق،استاد رفیق حسین، فیاض علی خاں،اسلم پھلروان،روینہ خان،حمیرا، عروج،عینی رباب،پریسہ،پروڈیوسر شوکت چنگیزی،ظفر عباس کھچی،ڈی او پی راشد عباس،پرویز کلیم،روبی انعم،اظہر بٹ اور نجیبہ بی جی نے کہا کہ بھارت لاکھوں کی تعداد میں فوجی طاقت کے بل بوتے پر سات دہائیوں میں بھی کشمیریوں کے حوصلے پست نہیں کر سکا اور جب تک ایک بھی کشمیری زندہ ہے کشمیر کی آزادی کی جدوجہد کی مشعل بْجھ نہیں سکتی۔

بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی جتنا مرضی ظلم کرلے وہ کشمیریوں سے ان کا حق آزادی نہیں چھین سکتا۔اب تو دنیا بھر کے لوگ جان چکے ہیں کہ بھارت میں کشمیریوں اور دیگر شہروں میں بسنے والے مسلمانوں کے ساتھ کتنا برا سلوک ہورہا ہے۔

مزید : کلچر