اہل مدارس مغربی ایجنڈا ہرگز قبول نہیں کریں گے‘ قاری حنیف جالندھری

    اہل مدارس مغربی ایجنڈا ہرگز قبول نہیں کریں گے‘ قاری حنیف جالندھری

  



مظفرگڑھ (نامہ نگار) دینی مدارس خیر کے مراکز اور قوم کے حقیقی محسن ہیں اصل سرمایہ اور قیمتی اثاثہ ہیں ' قوم کو علوم نبوی کے ذریعے راہنمائی کرنے والے ممتاز علماء کرام تیار کر کے دیتے ہیں جو ادارے بھاری بھرکم حکومت سے فنڈز لے کر بھی تیار کر کے نہیں دے سکتے(بقیہ نمبر27صفحہ12پر)

ان خیالات کا اظہار وفاق المدارس العربیہ پاکستان کے ناظم اعلیٰ مولانا قاری محمد حنیف جالندھری نے جامعہ دارالقرآن حسام الدین خان گڑھ میں ختم بخاری شریف کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا کہ مدارس کا دفاع جرات و استقلال سے کریں گے مدارس کی آزادی پر حرف نہیں آنے دیں گے اور کہا کہ اہل مدارس مغربی ایجنڈا ہرگز قبول نہیں کریں گے اہل مدارس یکساں نصاب تعلیم کے مخالف نہیں بلکہ یکساں نصاب تعلیم کو قومی وحدت کے لئے ضروری قرار دیتے ہوئے خیرمقدم کریں گے لیکن قومی نصاب میں تمام طبقات کی شمولیت ازحد ضروری ہے حکومت نیک نیتی سے قومی نصاب تعلیم تیار کرے اور مولانا محمد یوسف بنوری' مفتی محمد شفیع نے جو پاکستان کے نظام و نصاب تعلیم کے لئے سفارشات پیش کی تھیں ان کو بھی پیش نظر رکھا جائے اور عربی زبان کو بھی نصاب کا حصہ بنایا جائے انہوں نیکہا کہ اس وقت قومی نصاب کہلائے گا جب نصاب سے او لیول ' اے لیول وغیرہ کی تفریق ختم ہو گی انہوں نے کہا کہ اس حوالے سے دینی طبقات کو بیدار رہنے کی ضرورت ہے تقریب سے مولانا یعقوب دہلوی' مولانا محمد احمد مکی ' مولانا نصراللہ قاسمی' مفتی سعید ارشد الحسینی' حافظ نواز' مولانا حفظ الرحمنٰ عثمانی ' حاجی محمد اختر وسیم سمیت دیگر نے بھی خطاب کیا.

حنیف جالندھری

مزید : ملتان صفحہ آخر