پاکستان کی ٹیکسٹائل انڈسٹری ایک مرتبہ پھر جی اٹھی ، وہ خبر آ گئی جس کا ہر پاکستانی بے صبری سے انتظار کر رہا تھا

پاکستان کی ٹیکسٹائل انڈسٹری ایک مرتبہ پھر جی اٹھی ، وہ خبر آ گئی جس کا ہر ...
پاکستان کی ٹیکسٹائل انڈسٹری ایک مرتبہ پھر جی اٹھی ، وہ خبر آ گئی جس کا ہر پاکستانی بے صبری سے انتظار کر رہا تھا

  



کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن ) پاکستان کا ٹیکسٹائل سیکٹر اس وقت اپنی پوری پیداواری صلاحیت کے ساتھ چل رہا ہے اور امکان ہے حکومت رواں مالی سال کے دوران 24 سے 25 ارب ڈالر کا برآمدی ہدف حاصل کر لے گی۔

تفصیلات کے مطابق جنوری میں حکومت نے خام کپاس کی درآمد پر ٹیکس واپس لے لیے تھے، آل پاکستان ٹیکسٹائل ملز ایسوسی ایشن کے سابق چیئرمین آصف انعام نے ایکسپریس ٹربیون سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ٹیکسٹائل سیکٹر کی پیداوار اس وقت اپنی انتہا کو پہنچ چکی ہے اور ہمارے لئے مزید برآمدی آرڈرز پورے کرنے کی صلاحیت نہیں رہی۔انہوں نے بتایا کہ کورونا وائرس کی وجہ سے چین کی ٹیکسٹائل انڈسٹری متاثر ہوئی ہے اور بڑی تعداد میں عالمی خریدار پاکستان کا رخ کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا اگر حکومت بجلی گیس کی بڑھتے نرخ اور ریفنڈ کے مسائل پرقابو پالے تو آئندہ پانچ برسوں میں ٹیکسٹائل کی برآمدات دوگنا ہو سکتی ہیں۔

مزید : قومی