ساراسال پڑھنے کی بجائے کھیل کود اورفلمیں دیکھتا تھا،امتحان سے 15 دن پہلے۔۔۔صدرڈاکٹر عارف علوی نے اپنی زندگی سے بڑا پردہ اٹھا دیا

ساراسال پڑھنے کی بجائے کھیل کود اورفلمیں دیکھتا تھا،امتحان سے 15 دن ...
ساراسال پڑھنے کی بجائے کھیل کود اورفلمیں دیکھتا تھا،امتحان سے 15 دن پہلے۔۔۔صدرڈاکٹر عارف علوی نے اپنی زندگی سے بڑا پردہ اٹھا دیا

  



لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے فاطمہ جناح میڈیکل یونیورسٹی کے کانووکیشن سے خطاب کے دوران اپنی زندگی سے متعلق اہم بات کرتے ہوئے کہا کہ ساراسال میں پڑھنے کی بجائے کھیل کود اورفلمیں دیکھتا تھا،امتحان سے 15 دن پہلے میرارونا دھونا شروع ہو جاتا تھا۔

صدرمملکت نے فاطمہ جناح میڈیکل یونیورسٹی کے کانووکیشن سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ 80 کی دہائی میں فیصلہ ہوا میڈیکل میں داخلے میرٹ پر ہوں گے ،70 سے 80 فیصد سیٹیں میرٹ پر لڑکیاں لے جاتی ہیں ،لڑکیاں امتحان پاس کرکے پھر نظر نہیں آتیں،انہوں نے کہا کہ تعلیمی میدان میں لڑکیاں لڑکوں سے آگے ہیں ۔

صدرعارف علوی نے کہا کہ میڈیکل کے طلبہ کی تعلیم پر قوم کا بہت بڑا سرمایہ لگایا جاتا ہے، آپ کو والدین کا مشکور ہونا چاہئے جنہوں نے سرمایہ لگایا،انہوں نے کہا کہ خواتین کو شادی کے بعد گھر میں نہیں بیٹھ جانا چاہئے،خواتین کو شادی کے بعد بھی اپنے پروفیشنل کوجاری رکھنا چاہئے۔

صدر عارف علوی کا کہناتھا کہ ڈاکٹر بن کر اپنے ملک کی بجائے دوسرے ملک میں خدمت کرناقابل برداشت نہیں ،ڈاکٹر مریض سے ہمدردی سے پیش آئے تو مریض کو 30 فیصد شفاملتی ہے،غیرضروری میڈی کیشن خطرناک ہے۔

صدر مملکت نے کہا کہ ساراسال میں پڑھنے کی بجائے کھیل کود اورفلمیں دیکھتا تھا،جب امتحانات قریب آتے تومیرارونا دھونا شروع ہو جاتا تھا۔

مزید : قومی /علاقائی /پنجاب /لاہور