”نوازشریف کو دراصل یہ بیماری ہے“،فردوس عاشق اعوان نے سابق وزیراعظم کامرض تشخیص کرلیا

”نوازشریف کو دراصل یہ بیماری ہے“،فردوس عاشق اعوان نے سابق وزیراعظم کامرض ...
”نوازشریف کو دراصل یہ بیماری ہے“،فردوس عاشق اعوان نے سابق وزیراعظم کامرض تشخیص کرلیا

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)وزیراعظم کی معاون خصوصی ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نےکہاہے کہ مسلم لیگ (ن) اور پیپلزپارٹی کاگٹھ جوڑ عوام کے مفاد کیلئے نہیں تھا اور اب بلاول کو نوازشریف سے متعلق حقیقت کی سمجھ آگئی ہے،مریم بی بی ناجانے کس مصلحت کا شکار ہیں؟اُن کی آواز قوم کو سنائی نہیں دے رہی اور جو عوام کے درد سے نڈھال تھے وہ بھی کہیں دکھائی نہیں دے رہے،ن لیگ میں اس وقت زبان بندی کاموسم آیا ہوا ہے،انسان کو بیماری ہوتو اس کا علاج ہوتا ہے لیکن اقتدار سے دوری کی بیماری لاعلاج ہے،حکومت کے جانے کے خواب دیکھنے والوں کو ہوش دلانے کی ضرورت ہے۔

لاہور میں پاکستان تحریک انصاف کے کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہاکہ بلاول بھٹو کے والد کا نظریہ (ن) لیگ سے مختلف ہے،مسلم لیگ ن اور پیپلز پارٹی کا گٹھ جوڑ عوام کے مفاد کیلئے نہیں تھا،بلاول بھٹو اورآصف زرداری الگ الگ پالیسی پرچل رہے ہیں،بلاول کو زرداری نے جعلی اکاؤنٹس کے گر سکھائے، بلاول اور ان کے والد نے نواز شریف کی حقیقت چھپا کر رکھی۔فردوس اعوان نے کہا بلاول صاحب ہم تو آگاہ تھے آپ کو دیر سے سمجھ آئی، گٹھ جوڑ اور مک مکاعوام کیلئے نہیں بلکہ اپنا مال پانی بچانے کیلئے تھا،بلاول نے جو گفتگو کی وہ قابل تحسین ہے لیکن اس پر آپ کو ابو جان سے ڈانٹ پڑے گی،وہ کونسی پراسرار بیماری ہے جس کا کوئی علاج ڈاکٹر تشخیص نہیں کرپا رہے؟ہمیں معلوم ہے اس بیماری کا نام، اسکا نام اقتدار سے دوری ہے،بیماری ہوتو اس کا علاج ہوتا ہے لیکن اقتدار سے دوری کی بیماری لاعلاج ہے۔

انہوں نے کہاکہ شہبازشریف واپس آئیں کیونکہ ن لیگ میں قیادت کا قحط پڑا ہوا ہے،مریم بی بی ناجانے کس مصلحت کا شکار ہیں؟اُن کی آواز قوم کو سنائی نہیں دے رہی اور جو عوام کے درد سے نڈھال تھے وہ بھی کہیں دکھائی نہیں دے رہے،ن لیگ میں اس وقت زبان بندی کاموسم آیا ہوا ہے۔انہوں نے کہاکہ رانا ثنا اللہ نے نواز شریف کی سرجری کے حوالے سے تاریخ دی تھی، رانا ثناءاللہ صاحب میڈیا کی آنکھیں ترس گئی ہیں پلیٹ لیٹس دیکھنے کو، ایسی کیا بیماری ہے جس کا لندن میں بھی ڈاکٹرز علاج نہیں کرپارہے ہیں؟اس بیماری کا نام اقتدار سے دور بیٹھنا ہے، اقتدار کے ساتھ جڑی بیماری لاعلاج بیماری ہے، اس بیماری کا ایک ہی علاج ہے اور وہ اقتدار کا نشہ ہے، دعاگو ہیں میاں صاحب جلد صحت یاب ہوں۔

انہوں نے کہاکہ پلیٹ لیٹس سے متعلق معلومات کیلئے میڈیا انتظارکر رہا ہے، جب عوام ان کومسترد کردیں تو یہ بیمار پڑ جاتے ہیں، لندن میں رہنے والے جب صحت مند ہوتے ہیں تو شہنشاہ عالم ہوتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ میاں صاحب کے ایک سہولت کار ہیں جو ملک سے فرار ہیں، اپوزیشن لیڈر کے دونوں چیمبر خالی پڑے ہیں، اس وقت ن لیگی قیادت میں قحط پڑا ہوا ہے۔معاون خصوصی برائے اطلاعات نے کہا کہ آج لاہور کے شہری اور کچی آبادیوں والے اپنے فنڈز کا حساب مانگ رہے ہیں ، تمام فنڈز میگا پروجیکٹ بنانے پر لگائے گئے مگر مثبت اثرات نظر نہیں آئے، تحریک انصاف میں تنظیم نو سے پاکستان مضبوط بننے کا باعث بنے گا،لاہور میں مسلط سیاسی قبضہ مافیا کو شکست دیں گے،سیف اللہ خان اور اعجاز چوہدری نے تنظیمی ڈھانچے کو مضبوط کیا ہے،سینٹرل پنجاب کی تمام تنظیموں نے مینار پاکستان پر حلف اٹھایا ہے، گلے سڑے نظام سے چھٹکارے کے لیے کوششوں کے عزم کا اظہار کیا ہے، آپ نے پنجاب میں ن لیگ کے قلعے میں شگاف ڈال دیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ بھارت شاہین باغ میں احتجاج پر بیٹھی خواتین کے ساتھ ہیں،شاہین باغ کا احتجاج 60ویں دن میں داخل ہوچکا ہے،شاہین باغ میں ہزاروں خواتین مودی کے کالے قانون کے خلاف سراپا احتجاج ہیں۔انہوں نے کہاکہ وزیراعظم عمران خان عوام کو ریلیف دینے کیلئے کوشاں ہیں،عوام وزیراعظم عمران خان کو ہی واحد مسیحا سمجھتے ہیں،سندھ میں پیپلزپارٹی کا اقتدار ہچکولےلے رہا ہے،حکومت کے جانے کے خواب دیکھنے والوں کو ہوش دلانے کی ضرورت ہے۔

مزید : قومی