رُت بدلی تو پہناوے بھی بدلنے لگے……!

رُت بدلی تو پہناوے بھی بدلنے لگے……!

  

 آج کل لمبی،چھوٹی یا درمیانے سائز کی قمیض یاکرتے کا رواج زیادہ ہے

ہمارا ملک دنیا کے اس خطے میں واقع ہے جہاں چاروں موسم بدل بدل کر آتے ہیں۔ہر موسم کاہماری جلد پر الگ اثر ہوتا ہے لہٰذا اس کے مطابق پہناوا بھی الگ ہی ہونا چاہئے۔اگر لباس کا انتخاب کرتے وقت موسم کا خیال رکھاجائے توہم نہ صرف اچھا محسوس کریں گے، بلکہ ہماری صحت پر بھی اچھے اثرات مرتب ہوں گے۔موسم نے کروٹ لے لی ہے اور سردی اب بہار کے موسم میں بدلنے لگی ہے۔ اگر آپ نے ابھی تک اپنی الماری سیٹ نہیں کی تو یہ بہترین موقع ہے کہ سردیوں کے کپڑے سنبھال کر بہار کے موسم کی تیاری کریں۔

خوبصورت لباس انسان کی شخصیت نکھارنے میں اہم کردار ادا کرتا ہے۔اچھا لباس پہن کر انسان دوسروں کو ہی نہیں‘ اپنے آپ کو بھی اچھا لگتا ہے۔ خوبصورت لباس کا مطلب یہ نہیں ہے کہ وہ مہنگا اور قیمتی ہو، بلکہ سادہ اور اچھے رنگ کا کپڑا ہر کسی کی آنکھوں کو بھلا لگتا ہے۔

خواتین اپنے لباس کے حوالے سے مردوں کی نسبت زیادہ حساس ہوتی ہیں، لیکن ان میں بعض اس بات کی پرواہ نہیں کرتیں کہ لباس ان کے قد کاٹھ اورجلد کی رنگت کے مطابق ہے یا نہیں۔ ایسے میں کپڑے ان پر ٹھیک طرح سے نہیں جچتے۔یہ کوئی مشکل کام نہیں اور تھوڑی سی سمجھ بوجھ کے ساتھ ایک بہترین لباس کو چنا جا سکتا ہے۔آج ہم آپ کو پُرکشش دِکھنے اور لباس کے انتخاب کے حوالے سے کچھ اہم ٹپس سے آگاہ کریں گے۔

موسم بہار کے ہم رنگ لباس

ویسے تو سب رنگ ہی خوبصورت اور دلکش ہوتے ہیں لیکن موسم بہار کے لئے کچھ رنگ مخصوص ہوتے ہیں۔اس موسم میں ہلکے رنگوں کا انتخاب بہترین ہے جن کے حامل کپڑے پہن کر آپ خود کو ہلکا پھلکا محسوس کریں گے۔ہلکے رنگ حرارت کوجذب کرنے کی بجائے منعکس کر کے واپس بھیجتے ہیں، جس سے جسم کو گرمی نہیں لگتی۔ سفید رنگ کوموسم بہار کا سب سے پیارا رنگ کہا جاتا ہے۔ اس کے علاوہ ہلکا گلابی اور آسمانی رنگ بھی شخصیت میں نکھار پیدا کرتا ہے۔

نئے سال میں نیا انداز 

بدلتے موسم کے ساتھ برقعوں کے کپڑے کی ساخت،رنگ اور سلائی میں بھی تبدیلی آ جاتی ہے۔ گرمی کے لحاظ سے استعمال ہونے والے برقعے کے کپڑوں میں شفون اورعریبک لائن زیادہ پسند کئے جاتے ہیں۔ اب لوگوں میں صحت اور موسم کی ضرورت کے مطابق برقعوں کے استعمال کا شعور بڑھ رہا ہے لہٰذا صرف کالے رنگ کی بجائے دوسرے رنگوں مثلاً سبز،سکن، نیلے اور ہلکے رنگوں کے برقعوں کا رواج بھی بڑھ رہاہے۔

خواتین ویلینا اور کرنڈی کے ملبوسات زیب تن کرتی ہیں، مگر بالکل سادہ نہیں ان پر بڑی مہارت کے ساتھ دھاگے کا خوبصورت کام ہوتا ہے۔گلے،بازوؤں اور گھیرے پر کڑھائی بہت بھلی لگتی ہے۔

چھوٹے قد کی لڑکیاں 

جن لڑکیوں کا قد چھوٹا ہے‘ انہیں چاہئے کہ وہ ٹراؤزر کے ساتھ لمبی قمیض اور بینڈ والے گلے کا انتخاب کریں۔ اگر وہ چھوٹی شرٹ پہنیں گی تو اس سے وہ مزید چھوٹی نظر آئیں گی۔ایسے لوگ عمومی ڈیزائن مثلاً لکیروں یا چھوٹے ڈیزائن والے کپڑے پہنیں۔

قد کاٹھ والی لڑکیوں کے لئے

لمبے قدکی حامل لڑکیوں کے لئے ڈریسنگ کرنا کوئی مسئلہ نہیں ہوتا، لیکن بہت کم لمبائی والے کپڑے پہننے سے گریزکریں۔انہیں چاہئے کہ وہ درمیانے سائز کی قمیض پہنیں جس کے ساتھ وہ شلوار کابھی استعما ل کر سکتی ہیں۔ یہ سٹائل ان پر کافی جچے گا۔

وہ خواتین جو میچور ڈریسنگ چاہتی ہیں‘ اپنے لئے پلین شرٹس کا انتخاب کریں۔ اگرپلین شرٹس کے ساتھ گلے پر ہلکی سی کڑھائی والی قمیض یا کرتا ہو تو مزید خوبصورت ہوگا۔دونوں کا گلا سٹائلش ہونا چاہئے۔ کرتا چاہے چھوٹاہو یا لمبا، جینز کے ساتھ خوبصورت لگتا ہے۔آپ اپنی عمر کے مطابق ٹرینڈی شرٹس کا انتخاب کرسکتی ہیں۔آج کل لمبی،چھوٹی یا درمیانے سائز کی قمیض یاکرتے کا زیادہ رواج ہے۔

موٹی اور پتلی لڑکیوں کے لئے

وہ لڑکیاں جو تھوڑی موٹی ہیں انہیں ایسی ڈریسنگ کرنی چاہئے کہ بری نہ لگیں۔ان کو چاہیے کہ قدرے فٹ شرٹ پہنیں اور بینڈ والا گلا بنوائیں۔ اس طرح ان کی گردن صراحی دار اور کسی حد تک متناسب نظر آئے گی۔ ان کیلئے مشورہ ہے کہ وہ باہر جانے کیلئے ہی نہیں‘ گھر کیلئے بھی فٹنگ والے کپڑے بنوائیں تاکہ وہ انہیں یاد دلاتے رہیں کہ انہوں نے ہر صورت میں اپناوزن کم کرنا ہے‘ اس لئے کہ یہ صرف خوبصورتی نہیں‘ صحت کا بھی معاملہ ہے۔ کپڑے اتنی بھی فٹنگ میں نہ بنوائیں کہ وہ ان میں پھنسی ہوئی لگیں یاجسم کی ساخت بھدی لگے۔

کمزوریا پتلی جسامت کے حامل افراد بڑے اور کھلے پرنٹ پہنیں۔ کپڑے ڈھیلے ڈھالے سلوائیں اور ڈھلکنے والے مثلاً کھلے فراک یا انگرکھا جیسے ڈیزائنز کا زیادہ استعمال کریں۔یہ آپ کے جسم کو بھرا بھرا اور پرکشش دکھائیں گے۔

سانولی رنگت کی خواتین کو چاہیے کہ وہ بہت گہرے رنگ نہ پہنیں۔مزید برآں لباس کا انتخاب کرتے ہوئے صحت کو مدنظر ضرور رکھیں۔کوشش کریں کہ قمیض کی آستین پوری ہوتاکہ دھوپ کی وجہ سے جلد کی رنگت متاثر نہ ہو۔اس کے علاوہ چھتری کا استعمال کریں تاکہ آپ کے خوبصورت بازو اور چہرہ دھوپ سے محفوظ رہیں۔ 

موسم بدلتے ہیں تو فیشن کے انداز بھی بدل جاتے ہیں اور ہر کوئی جاذب نظر دکھنے کے جتن میں مصروف ہو جاتا ہے۔ خانہ داری کے امور تو چلتے ہی رہتے ہیں، مگر موسم کی مناسبت سے فیشن اور لباس کا انتخاب بھی انتہائی اہم ہے۔ اصل میں موسموں کا ساتھ دینے والے فطرت کا ساتھ دیتے ہیں۔

٭٭٭

مزید :

ایڈیشن 1 -