محکمہ سکارپ: رشوت لیکر متعدد ملازمین  بھرتی کرنیکا انکشاف‘ سروس بک غائب

محکمہ سکارپ: رشوت لیکر متعدد ملازمین  بھرتی کرنیکا انکشاف‘ سروس بک غائب

  

 مظفرگڑھ (نیوز رپورٹر‘ نامہ نگار) محکمہ سکارپ میں  مبینہ طور پر بھاری رشوت کے عوض بھرتی کیے گئے متعدد ملازمین(بقیہ نمبر43صفحہ 6پر)

 نتخواہوں سے محروم ہیں، ایک سال قبل تین سے چار لاکھ روپے فی کس لے کر درجہ چہارم کے آڈرز کیے گئے، سروس بک سمیت دیگر ضروری کاغذات چھپا لیے گئے، تفصیل کے مطابق متاثرین عرفان مرزا، نادرحسین، محمد نعیم، محمد رمضان اور شوکت حسین نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ محکمہ سکارپ اینڈ ورکشاپ کے جونئیر کلرک فیاض قریشی نے ایک سال قبل نوکری کا جھانسہ دے کر ہم سے لاکھوں روپے بٹور کر محکمہ سکارپ میں نوکری کے آڈرز کروا دئیے۔  آڈرز کروانے کے بعد سروس بک بھی جاری کردی گئی۔ ایک سال سے زاہد کا عرصہ گزر جانے کے باوجود تاحال تنخواہیں جاری نہ ہوسکیں، متاثرین نے یہ الزام بھی عائد کیا ھے کہ اس فراڈ میں محکمہ سکارپ کے ایکسین چودھری اطہر، شفیق احمد ہیڈکلرک بھی ملوث ہیں۔ جونئیر کلرک فیاض قریشی نے ہماری سروس بک سمیت دیگر ضروری کاغذات بھی چھپا لیے ہیں۔ متاثرین عرفان مرزا، نادر حسین، محمد نعیم، محمد رمضان اور شوکت حسین نے اعلی حکام سے نوٹس لیتے ہوئے انصاف فراہم کرنے کا مطالبہ کیا ھے۔

غائب

مزید :

ملتان صفحہ آخر -