جہاز کے اوپر سے کوئی چیز گزری جیسے میزائل ہو، مسافر طیارے کے پائلٹ کی کنٹرول ٹاور سے گفتگو نے تہلکہ برپاکردیا

جہاز کے اوپر سے کوئی چیز گزری جیسے میزائل ہو، مسافر طیارے کے پائلٹ کی کنٹرول ...
جہاز کے اوپر سے کوئی چیز گزری جیسے میزائل ہو، مسافر طیارے کے پائلٹ کی کنٹرول ٹاور سے گفتگو نے تہلکہ برپاکردیا

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) ایرانی فوج نے چند ماہ قبل ایک یوکرینی مسافر ہوائی جہاز کو غلطی سے میزائل سے مار گرایا تھا۔ انڈونیشیا ایئرلائنز کی پرواز ایم ایچ 370سمیت حالیہ عرصے میں چند دیگر تباہ ہونے والے بدقسمت مسافر طیاروں کے متعلق افواہ پائی جاتی ہیں کہ انہیں بھی میزائل سے نشانہ بنایا گیا۔اب امریکہ سے بھی اس حوالے سے ایک ایسی خبر آ گئی ہے کہ سن کر ہی لوگ فضائی سفر سے خوف کھانے لگیں۔

 میل آن لائن کے مطابق معروف بلاگر سٹیو ڈوگلس نے گزشتہ دنوں امریکن ایئرلائنز کی پرواز2292 کی ریڈیو ٹرانسمیشن کو انٹرسیپٹ کیا جس میں پائلٹ کنٹرول ٹاور کو یہ ہولناک بات بتا رہا تھا کہ ابھی ابھی جہاز کے اوپر سے کوئی چیز انتہائی تیز رفتاری کے ساتھ گزری ہے۔

سٹیو ڈوگلس کی لیک کی گئی اس آڈیو میں پائلٹ کنٹرول ٹاور کو بتا رہا ہوتا ہے کہ جہاز کے اوپر سے گزرنے والی یہ چیز ایک بہت بڑے سلنڈر کی طرح تھی جیسے میزائل ہوتا ہے۔ اس وقت امریکن ایئرلائنز کی یہ پرواز امریکی ریاست نیومیکسیکو کے علاقے ڈیس مونیز کے اوپر 36ہزار فٹ کی بلندی پر تقریباً 746کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے اڑ رہی تھی۔ یہ پرواز فوئنکس جا رہی تھی۔ ڈوگلس بتاتا ہے کہ اس میزائل نما چیز کے گزرنے کے بعد پرواز کے ساتھ کوئی اور واقعہ پیش نہیں آیا اور وہ بحفاظت فوئنکس پہنچ کر لینڈ کر گئی۔

 واضح رہے کہ امریکی ریاست نیومیکسیکو آسمان میں اس طرح کی پراسرار چیزوں کی پروازوں کے حوالے سے شہرت رکھتی ہے، جن کے متعلق بسااوقات یہ خیال بھی کیا جاتا ہے کہ یہ خلائی مخلوق کی اڑن طشتریاں ہیں۔1947ءمیں خلائی مخلوق کو دیکھے جانے کا جو مبینہ دعویٰ کیا گیا تھا وہ بھی اسی ریاست کے شہر روزویل کے قریب پیش آیا تھا۔

مزید :

بین الاقوامی -