بکنی پر پابندی لگائے جانے پر والی بال کی دو کھلاڑیوں نے قطر میں ٹورنامنٹ کا ہی بائیکاٹ کردیا

 بکنی پر پابندی لگائے جانے پر والی بال کی دو کھلاڑیوں نے قطر میں ٹورنامنٹ کا ...
 بکنی پر پابندی لگائے جانے پر والی بال کی دو کھلاڑیوں نے قطر میں ٹورنامنٹ کا ہی بائیکاٹ کردیا
سورس:   Pxhere

  

دوحہ(مانیٹرنگ ڈیسک)قطر میں تیراکی کے لباس ’بکنی‘ پر پابندی عائد ہونے کی وجہ سے والی بال کی دو جرمن کھلاڑیوں نے قطر ٹورنامنٹ میں حصہ لینے سے انکار کر دیا۔

 میل آن لائن کے مطابق یہ خواتین کھلاڑی کیرلا بورگر اور جولیا سوڈی ہیں جن کا کہنا ہے کہ قطر دنیا کا پہلا ملک ہے اور یہ دنیا کا پہلا ٹورنامنٹ ہے جہاں ہمیں حکومت بتاتی ہے کہ ہمیں کھیلنا کیسے ہے اور کھیل کے دوران ہمیں پہننا کیا ہے۔ چنانچہ ہم آئندہ ماہ قطر میں ہونے والے والی بال ٹورنامنٹ کا بائیکاٹ کریں گی۔

کیرلا اور جولیا کا کہنا تھا کہ ’ہم وہاں اپنی جاب کے لیے جاتی ہیں لیکن ہمیں وہاں ہماری جاب کے کپڑے پہننے سے روکا جاتا ہے۔ ‘ واضح رہے کہ یہ ایونٹ مارچ میں ہونے جا رہا ہے اور قطر پہلی بار اس خواتین ٹور ایونٹ کی میزبانی کر رہا ہے۔ اس ٹورنامنٹ میں قطری حکام کی طرف سے خواتین کھلاڑیوں کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ بکنی کی بجائے شرٹ اور لمبے ٹراﺅزر پہنیں۔ حکام کا کہنا ہے کہ بکنی قطر کی ثقافت اوراقدار کے منافی ہے چنانچہ خواتین کھلاڑیوں کو اس کی اجازت نہیں دی جائے گی۔

مزید :

کھیل -عرب دنیا -