پی ٹی آئی رہنما لیاقت جتوئی کا اپنی جماعت پر سینیٹ ٹکٹ 35 کروڑ کا بیچنے کا الزام ، سیف اللہ ابڑو خود میدان میں آ گئے ، بڑا اعلان کر دیا 

پی ٹی آئی رہنما لیاقت جتوئی کا اپنی جماعت پر سینیٹ ٹکٹ 35 کروڑ کا بیچنے کا ...
پی ٹی آئی رہنما لیاقت جتوئی کا اپنی جماعت پر سینیٹ ٹکٹ 35 کروڑ کا بیچنے کا الزام ، سیف اللہ ابڑو خود میدان میں آ گئے ، بڑا اعلان کر دیا 

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن )پاکستان تحریک انصاف کے مرکزی رہنما اور سابق وزیراعلیٰ سندھ لیاقت جتوئی نے اپنی ہی جماعت پر سنگین الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ سیف اللہ ابڑو کو سینیٹ کا ٹکٹ پینتیس کروڑ کے عوض فروخت کیا گیا جس پر اب پی ٹی آئی رہنما سیف اللہ ابڑو بھی میدان میں آ گئے ہیں اور انہوں نے قانونی نوٹس بھیجنے کا اعلان کر دیاہے ۔

تفصیلات کے مطابق سیف اللہ ابڑو نے بیان جاری کرتے ہوئے کہا کہ مجھ پر لیاقت جتوئی کی جانب سے بے بنیاد الزامات عائد کیے گئے ہیں ، خان بہادر آپ کو اخلاقیات کا پتا ہی نہیں ہے ، کتنے دنوں سے آپ لوگ میرے خلاف لابنگ کر رہے ہیں ، آپ کو قانونی نوٹس بھجوا رہاہوں اور اب ملاقات عدالت میں ہی ہو گی ۔ سیف اللہ ابڑو کا کہناتھا کہ آپ نے جو الزاما ت عائد کیے ہیں ان کا جواب دینا پڑے گا ،لیاقت جتوئی اپنے بیہودہ الزامات کو ثابت کرنا ہو گا، آپ نے کہا کہ میں نے 35 کروڑ روپے دے کر سینیٹ کا ٹکٹ حاصل کیاہے ۔

کچھ دیر قبل لیاقت جتوئی نے بیان جاری کرتے ہوئے کہا تھا کہ گورنر ہاو¿س سندھ کے ڈرائنگ روم میں رات کو ہونے والے سیاسی فیصلے پارٹی کے لیے نقصان دہ ہیں، پیراٹروپر سیف اللہ ابڑو کو 35 کروڑ میں سینیٹ ٹکٹ بیچا گیا، کراچی میں بیٹھے چند افراد فیصلہ کرتے ہیں جو پارٹی کے لئے نقصان دہ ہیں۔

یاد رہے کہ الیکشن ٹریبونل نے پاکستان تحریک انصاف کے سینئر رہنما سیف اللہ اابڑو کے کاغذات نامزدگی مسترد کرتے ہوئے ریٹرنگ افسر کا فیصلہ کالعدم قرار دیدیا تھا۔ سیف اللہ کے کاغذات نامزدگی منظور ہونے کے خلاف غلام مصطفی میمن نے اپیل دائر کی تھی جسے الیکشن ٹریبونل نے منظور کر لیا تھا ۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -