کراچی میں13سالہ لڑکی کی پھندا لگی لاش برآمد، زیادتی کے بعد لٹکائے جانے کا انکشاف

کراچی میں13سالہ لڑکی کی پھندا لگی لاش برآمد، زیادتی کے بعد لٹکائے جانے کا ...
کراچی میں13سالہ لڑکی کی پھندا لگی لاش برآمد، زیادتی کے بعد لٹکائے جانے کا انکشاف
کیپشن: File Photo

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

کراچی (ویب ڈیسک)کورنگی میں گھر سے 13 سالہ لڑکی کی پھندا لگی لاش ملی ہے اور پوسٹمارٹم کے بعد پولیس سرجن ڈاکٹر سمعیہ سعید نے بتایاکہ ’ث‘  کو زیادتی کے بعد لٹکایا گیا جبکہ موت گلا گھٹنے کےباعث ہوئی۔ایس ایچ او نے  بتایا کہ اہل خانہ پولیس کو پوسٹ مارٹم کروانے سے روک رہے تھے اور احتجاج کررہے تھے کہ ہمیں لڑکی کی میت کو گاؤں لے کر جانی ہے۔

تفصیلات کے کورنگی صنعتی ایریا کے علاقے بلال کالونی سیکٹر 8 بی میں گھر سے لڑکی کی پھندا لگی لاش ملی جس کی شناخت 13سالہ ثناء دختر انور علی کے نام سے ہوئی، اس حوالے سے ایس ایچ او فراز نے بتایا کہ واقعہ مشکوک معلوم ہوا ، گھر والوں نے پولیس کو بیان دیا کہ متوفیہ ذہنی مریضہ تھی اور اس نے پھندا لگا کر خودکشی کی ہے۔ پولیس کے مطابق اہلخانہ نے جس جگہ پھندے کی نشاندہی کی تھی وہ مقام بھی مشتبہ ہے، لڑکی کے گلے پر پھندے کا نشان پرانا معلوم ہوتا ہے،واقعہ مشکوک لگنے پر پولیس نے لڑکی کی لاش کو پوسٹ مارٹم کیلئے جناح ہسپتال منتقل کردیا تاکہ پوسٹ مارٹم رپورٹ کے بعد وجہ موت سامنے آسکیں ۔

دوسری جانب ترجمان ضلع کورنگی پولیس کے مطابق لاش کو قانونی کارروائی کے بعد پوسٹ مارٹم کے لیے ہسپتال منتقل کردیا گیا ہے اور شبہ ہے کہ بچی کے ساتھ زیادتی کرنے کے بعد اسے لٹکایا گیا ہو،ترجمان نے بتایا کہ کمرے کی چھت کی اونچائی اضافی ہے خود سے پھندا لگانا مشکوک ظاہر ہوتا ہے۔