معذور بچوں کی بر وقت  تعلیم و تربیت سے بہتر نشوونما ممکن ہے : آمنہ آفتاب

معذور بچوں کی بر وقت  تعلیم و تربیت سے بہتر نشوونما ممکن ہے : آمنہ آفتاب
 معذور بچوں کی بر وقت  تعلیم و تربیت سے بہتر نشوونما ممکن ہے : آمنہ آفتاب

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

جدہ (محمد اکرم اسد) سماجی تنظیم مشعل راہ کی بانی ممبر آمنہ آفتاب نے  کہا کے معذور بچوں کی بر وقت  تعلیم و تربیت سے بہتر نشوونما ممکن ہے تاہم ذہنی و جسمانی طور پر معذور بچوں کو ابتدائی تعلیم و تربیت کی نارمل بچوں سے زیادہ ضرورت ہوتی ہے.

یہاں منعقد ہونیوالی مشعل راہ کی آگاہی مہم کی تقریب میں جدہ کمیونٹی کی بھی ایک کثیر تعداد موجود تھی . تقریب سے خطاب کرتے ہوئے آمنہ آفتاب  نے اپنی ذاتی زندگی کاذکر کیا اور کہا کہ  جب اللہ تعالیٰ نے مجھے مخصوص صلاحیتوں والی اولاد کی نعمت سے نوزا تو اس وقت میں ذہنی دباؤ میں چلی گئی اور ہر وقت اللہ تعالیٰ سے شکوہ کرتے رہتی  کہ میں کیسے اس بچے کی نشںو و نما کرونگی؟ کیسے اس بچے کو تعلیم و تربیت دوں گی؟ جیسے کہتے ہیں کہ وقت سب زخم بھر دیتا ہے اور پھر میں نے مشعل راہ فاؤنڈیشن کی بنیاد رکھی جس میں  میری دوست ارنیش جو مشعل راہ کی صدر و بانی ممبران میں سے ہیں، انکے تعاون سے مشعل راہ کی بنیاد رکھی جس کے پہلے ڈونر میرے والد تھے اور آج میں اپنے رب کی شکر گزار ہوں ، مشعل راہ کے وجہ سے سینکڑوں بچوں کو مفت تعلیم و تربیت دی جارہی ہے جس سے مخصوص صلاحیتوں کے مالک بچے خود کفیل ہو رہے ہیں.

 تقریب سے ارنیش، ڈاکٹر عدیل چوہدری، عمران رانا، رخشندہ پوری، بنت الحسن اور دیگر نے بھی خطاب کیا اور مشعل راہ کے مختلف پروگراموں کے حوالے سے آگاہ کیا.