سابق کمشنر راولپنڈی کیخلاف توہین الیکشن کمیشن اور کریمنل کارروائی کی سفارش

سابق کمشنر راولپنڈی کیخلاف توہین الیکشن کمیشن اور کریمنل کارروائی کی سفارش
سابق کمشنر راولپنڈی کیخلاف توہین الیکشن کمیشن اور کریمنل کارروائی کی سفارش

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) سابق کمشنرراولپنڈی لیاقت چٹھہ کے الزامات کے معاملے پر انکوائری کمیٹی نے سابق کمشنر کے الزامات کو جھوٹ پرمبنی قراردے دیا جبکہ انکوائری کمیٹی نے ان کے خلاف توہین الیکشن کمیشن اور کریمنل کارروائی کی سفارش کردی۔

ذرائع الیکشن کمیشن کے مطابق الیکشن کمیشن کی انکوائری کمیٹی کی رپورٹ تیارکرکے کمیشن کو پیش کردی گئی۔انکوائری کمیٹی نے سابق کمشنر کے الزامات کو جھوٹ پر مبنی قرار دے دیا جبکہ انکوائری کمیٹی نے لیاقت علی چٹھہ کے خلاف توہین الیکشن کمیشن اور کریمنل کارروائی کی سفارش کر دی۔

ذرائع کا کہنا ہے انکوائری کمیٹی نے بیانات کی روشنی میں کمیشن کو سفارشات بھی دیں، جس میں انکوائری کمیٹی نے لیاقت چٹھہ کے خلاف قانونی کارروائی کی سفارش کردی۔

انکوائری کمیٹی نے اپنی سفارش میں کہا ہے کہ لیاقت چٹھہ کے خلاف توہین الیکشن کمیشن یا کریمنل کارروائی کی جائے۔

ذرائع کے مطابق انکوائری کمیٹی کی رپورٹ میں بتایا گیا کہ لیاقت چٹھہ نے تسلیم کیا کہ کسی کے بہکاوے میں آ کر بیان دیا، لیاقت چٹھہ نے انکوائری کمیٹی کے سامنے بیان پر معافی مانگ لی۔

رپورٹ کے مطابق سابق کمشنر راولپنڈی لیاقت چٹھہ کے الزامات جھوٹ پر مبنی ہیں، انکوائری رپورٹ کے ساتھ سابق کمشنر راولپنڈی کا بیان لگایا گیا ہے، 6 ڈی آر اوز اور قومی و صوبائی حلقوں کے آر اوز کے بیانات بھی لگائے گئے۔