شوہر کی آخری خواہش پوری کرنے کیلئے 86 سالہ بڑھیا نے زندگی کو انوکھا رنگ دے دیا

شوہر کی آخری خواہش پوری کرنے کیلئے 86 سالہ بڑھیا نے زندگی کو انوکھا رنگ دے دیا

شکاگو (نیوز ڈیسک) دنیا کے مہنگے ترین تفریحی کروز بحری جہازوں پر ایک دفعہ سفر کرنا بھی اکثر لوگوں کیلئے محض خواب ہے مگر ایک امریکی دادی اماں پچھلے 17 سال سے ایک کروز شپ پر مقیم ہیں اور اس کیلئے اب تک کروڑوں ڈالر خرچ کرچکی ہیں۔

لیواچسٹیٹر کی عمر 86 سال ہے اور وہ ”کرسٹل سرنیٹی“ نامی کروز جہاز پر اتنا طویل قیام کرچکی ہے کہ اس بحری جہاز کے 655 افراد پر مشتمل عملے کی اکثریت ان کے بعد جہاز پر آئی ہے۔ وہ اب تک 100 سے زائد ملکوں کی سیر کرچکی ہیں اور تاعمر بحری جہاز پر ہی رہنا چاہتی ہیں۔ یہ معمر خاتون جہاز پر ”مامالی“ کے نام سے مشہور ہیں۔ وہ کہتی ہیں کہ 1997ءمیں ان کے خاوند کینسر سے ہلاک ہوگئے مگر انہوں نے دنیا سے جانے سے پہلے کہا تھا کہ تم بحری جہاز کے ذریعے دنیا کی سیر کرنا ہمیشہ جاری رکھنا۔

چھٹیاں گزارنے کے لیے سستے ترین بین اقوامی مقامات

مامالی کا کہنا ہے کہ انہوں نے اپنے خاوند کے ساتھ ملکر 50 سالہ شادی شدہ زندگی میں 89 بحری سفر کئے تھے اور یہ ان کا پسندیدہ ترین مشغلہ تھا اور اسی لئے شوہر نے یہ مشغلہ جاری رکھنے کو کہا تھا۔ خاوند کی موت کے بعد انہوں نے اپنا مہنگا گھر اور دیگر جائیداد بیچ دی اور اب وہ سالانہ تقریباً 2 کروڑ روپے ادا کرکے کروز جہاز پر زندگی جاری رکھے ہوئے ہیں۔

مزید : ڈیلی بائیٹس

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...