باپ کے بعد بیٹی۔۔۔صدام حسین کی بیٹی نے بھی مغربی دنیا کو پریشان کردیا

باپ کے بعد بیٹی۔۔۔صدام حسین کی بیٹی نے بھی مغربی دنیا کو پریشان کردیا
باپ کے بعد بیٹی۔۔۔صدام حسین کی بیٹی نے بھی مغربی دنیا کو پریشان کردیا

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

اومان (نیوز ڈیسک) سابق عراقی ڈکٹیٹر صدام حسین کی بڑی بیٹی رغد صدام حسین اپنے ملک سے جلاوطن ہونے کے بعد اردن جا کر ایک مشہور جیولری ڈیزائنر بن گئی ہیں اور آج کل ہیرے اور سونے کے زیورات بنا بنا کر بیچ رہی ہیں۔ رغد کو 2003ءمیں عراق چھوڑنا پڑا اور وہ اردن میں پناہ گزین ہو گئیں۔

برطانوی میڈیا کے مطابق اگرچہ وہ پناہ گزین ہیں لیکن ان کی زندگی شاہانہ ہے اور وہ وقت گزارنے کیلئے ہیرے جواہرات کا کاروبار کرتی ہیں۔ ان کے زیورات کے ڈیزائن ان کے والد صدام حسین اور خاوند حسین کمال الماجد کے نظریات کے عکاس ہیں۔ وہ عراقی تہذیب، کلچر اور صدام حسین کے تصاویر اور یادگاروں سے مزین زیورات تیار کرتی ہیں جو لاکھوں کروڑوں میں بکتے ہیں۔

محبت میں ناکامی پر لڑکی نے پھانسی لے لی، عاشق قبر پر جاکر مرگیا

رغد نے 1983ءمیں صدام حسین کے ریپبلکن گارڈ نامی خصوصی حفاظتی دستے کے سپروائزر حسین کمال سے شادی کر لی اور 16 سال کی عمر میں اپنے پہلے بیٹے کو جنم دیا۔ وہ شروع سے ہی پرآسائش زندگی، مہنگے ترین مغربی برانڈ کے کپڑے، جوتوں اور زیورات کی شوقین رہی ہیں۔ ان کے خاوند حسین کمال کو صدام حسین نے قتل کروا دیا تھا مگر اس کے باوجود انہوں نے والد کو معاف کر کے ان سے محبت جاری رکھی اور آج بھی ان کی یاد میں زیورات بناتی ہیں۔

مزید : بین الاقوامی