متحدہ علما اہلسنت گستاخانہ خاکوں کی اشاعت کیخلاف آج ہڑتال کرے گی

متحدہ علما اہلسنت گستاخانہ خاکوں کی اشاعت کیخلاف آج ہڑتال کرے گی

سرینگر(کے پی آئی)متحدہ علما اہلسنت جموں و کشمیر نے فرانس میں گستاخانہ خاکوں کی اشاعت کے خلاف آج( جمعہ کو) مکمل ہڑتال کرنے کی اپیل کی ہے۔ ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے متحدہ علما اہلسنت کے ترجمان اعلی قاضی یاسر احمد نے کہا کہ گستاخانہ خاکوں کی اشاعت سے دنیا بھر کے مسلمانوں کے جذبات مجروح ہوئے ہیں اورمسلمان پیغمبر آخر الزمانؓ کی شان میں کسی بھی گستاخی کو برداشت نہیں کرسکتا ۔انہوں نے کہا کہ وہ یہ توقع کررہے تھے کہ حریت کانفرنس اس اشاعت کے خلاف ہڑتال کی کال دے گی تاہم جب ایسا نہیں ہوا۔یاسر نے کہا ہ بحثیت مسلمان ہم سب پر یہ ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ اس قسم کی گستاخی کے خلاف بلا لحاظ مسلک سراپا احتجاج ہوں ،اس لئے متحدہ علما اہلسنت 23جنوری جمعہ کو ہڑتال کرنے کی اپیل کرتی ہے ۔انہوں نے تجارتی انجمنوں اور ٹرانسپورٹ اداروں سے اپیل کی کہ وہ ہڑتال میں تعاون کریں اور ناموس رسالت کے تئیں اپنی ذمہ داری کا مسلمہ ثبوت پیش کریں ۔قاضی یاسر نے کہا کہ اس روز متعدد دینی مراکز ،مساجد اور خانقاہوں سے احتجاجی جلوس نکالے جائیں گے اور ائمہ و مبلغین حضرات سے اپیل کی کہ وہ مساجد سے جلوس نکالیں ۔

انہوں نے کہا کہ فروری کے پہلے ہفتے میں متحدہ علما اہلسنت کا ایک وفد مولانا ریاض الحق نورآبادی کی قیادت میں نئی دلی جائے گا اور اسلامی ممالک کے سفارت کاروں سے مل کر مستقبل کے پروگرام کے حوالے سے لائحہ عمل طے کیا جائے گا۔جموں میں مضربی پاکستان کے رفیوجیوں کی باز آزاد کاری کے متعلق انہوں نے کہا کہ بھارت اسرائیل طرز کی پالیسی چلانا چاپتا ہے۔

لیکن ہم کسی بھی حال میں بھارت کو اس کے ارادوں میں کامیاب نہیں ہونے دیں گی۔

مزید : عالمی منظر