مقبوضہ کشمیر میں برفباری بارشوں کا سلسلہ جاری

مقبوضہ کشمیر میں برفباری بارشوں کا سلسلہ جاری

سرینگر(کے پی آئی)محکمہ موسمیات کی پیشگوئی کے عین مطابق بدھ کو وادی کے بالائی علاقوں میں تازہ برفباری اور میدانی علاقوں میں بارشوں کا آغاز ہوا ۔تاہم جموں سرینگر شاہراہ پر گاڑیوں کی دو طرفہ آمدورفت آخری اطلاعات تک بغیر کسی خلل کے جاری تھی۔اس دوران محکمہ موسمیات نے ایک مرتبہ پھر کہا ہے کہ آج 23 جنوری تک کشمیر وادی کے علاوہ خطہ چناب کے کئی اضلاع میں برفباری کے ساتھ ساتھ بارشیں بھی ہونگی ۔وادی میں تین روز سے ہی آسمان پر گہرے بادل چھائے رہے اور گذشتہ دوپہر تک مطلع ابرالودہ رہا اور بعد دوپہر پیر پنچال کے آر پار بالائی علاقوں میں برفباری شروع ہوئی ۔ اسلام آباد سے ملک عبدالسلام نے اطلاع دی ہے کہ سنتھن ٹاپ ، مرگن ٹاپ ، پہلگام کی پہاڑیوں کے علاوہ جنوبی کشمیر کے بالائی علاقوں میں برف باری کا سلسلہ جاری رہا ۔

اور ان علاقوں میں چار سے پانچ انچ برف جمع ہو گئی تھی ۔گاندربل سے ارشاد احمد نے اطلاع دی ہے کہ سونہ مرگ ، گگن گیر ، زوجیلا ، گمری ، میں بدھ کی صبح سے برف باری ہو رہی ہے اور وہاں 4 سے 8 انچ کے قریب برف جمع ہو گئی تھی ۔ گلمرگ اور افروٹ کی پہاڑیوں پر بھی برف باری ہونے کی اطلاعات ہیں ۔کپوارہ سے اشرف چراغ نے اطلاع دی ہے کہ ضلع کے بالا ئی علا قو ں میں برف باری جبکہ میدانی علا قو ں میں ہلکی بارشیں ہورہی ہیں ۔اس دوران چوکی بل کرنا ہ ،میلیال کیرن ،کلاروس مژھل،چوکی بل، بڈنمل اور زرہامہ جمہ گنڈ سڑکیں برف باری کے نتیجے میں گا ڑیو ں کی آ مد و رفت کے لئے احتیاتی طور پر بند کر دی گئی ہیں اوربدھ کو دوپہر 2بجے سے کسی بھی گا ڑی کو ان علا قو ں کو جانے کی اجازت نہیں دی گئی ۔ سادھنا ٹاپ پر ایک فٹ ،فرکیا ں ٹاپ پر 9،زیڈ گلی مژھل میں 10 انچ برف ریکارڈ کی گئی ۔ برف باری کے پیش نظر ضلع نے چو کی بل ،مژھل ،فرکن اور دوسرے بالائی علا قو ں کے لو گو ں سے تلقین کی ہے کہ وہ برف باری کے دوران نقل حرکت نہ کریں کیونکہ ان علا قو ں میں بر فا نی تو دے گرنے کا خطرہ لاحق ہو سکتا ہے ۔بانہال سے محمد تسکین نے اطلاع دی ہے کہ بارشوں اور برفباری کے باوجود جموں سرینگر شاہراہ پر گاڑیوں کی دو طرفہ آمدورفت بدھ کی شام تک بغیر کسی خلل کے جاری تھی ۔ ٹریفک پولیس کا کہنا ہے گاڑیوں کو ادہمپور اور قاضی گنڈ کی حدود پار کرنے کیلئے مقرر کئے گئے اوقات کے بعد کسی بھی گاڑی کو آگے بڑھنے کی اجازت نہیں ہی۔ انہوں نے کہا کہ اگر شام دیر گئے تک جواہر ٹنل کے آر پار برفباری میں تیزی آئی تو لور منڈہ اور بانہال سے آگے کسی بھی گاڑی کو جانے کی اجازت نہیں دی جائے گئی ۔بدھ دوپہر بعد وادی چناب کے بانہال ، رام بن ، گول ، ڈوڈہ ، بھدرواہ اور کشتواڑ کے نچلے علاقوں میں ہلکی ہلکی بارشیں شروع ہوئیں جبکہ پیر پنچال اور ہمالیائی پہاڑوں سمیت دیگر پہاڑی علاقوں برف باری شروع ہوئی جو شام دیر گئے تک جاری تھی ابھی تک پہاڑوں پر نچلے سے درمیانہ درجے کی تازہ برفباری ہوئی ہے جو بانہال ٹنل ، نیل ، مہو منگت ، باوا،گول کی بستیوں تک پہنچ گئی ہے ۔ بدھ کی شام تک جواہرٹنل کے آرپار چند انچ برف ہوئی ہے جبکہ پتنی ٹاپ کے سیاحتی مقام پر ہلکی سی برفباری ہوئی ہے ۔اس دوران ڈپٹی کمشنر رام بن فاروق شاہ بخاری نے پہاڑی علاقوں میں رہنے والے لوگوں سے تلقین کی ہے کہ وہ برف باری کے دوران ان علاقوں میں جانے سے احتیاط برتیں جہاں برفانی تودے گر آنے کا اندیشہ ہو ۔

مزید : عالمی منظر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...