دہشت گردی نہ ہو تو معیشت زیادہ تیزی سے ترقی کر سکتی ہے،رپورٹ

دہشت گردی نہ ہو تو معیشت زیادہ تیزی سے ترقی کر سکتی ہے،رپورٹ

اسلام آباد(آئی اےن پی) دہشت گردسے پاک پاکستان کی معیشت زیادہ تیزی سے ترقی کر سکتی ہے ،ایک حالیہ تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ دہشت گردانہ تشدد نے ہو تو پاکستان کی معیشت اصل سے زیادہ تیزی سے ترقی کر سکتی ہے۔ڈیفینس اینڈ ہیس اکنامکس میں شائع ہونے والی رپورٹ میں کہا کہ گیا ہے کہ حکمراں اشرافیہ کی نااہلی اور کرپشن ہی ملک کی معیشت کو پٹری سے اتارنے کے لئے کم نہ تھی کہ رہی سہی کسر مسلسل دہشت گردی نے پوری کردی۔ رپورٹ میں اندازہ لگایا کہ 1973 سے 2008 کے دوران دہشت گردانہ تشدد کی عدم موجودگی میں پاکستان کے حقیقی ،افراط زر ایڈجسٹ، جی ڈی پی میں 119فیصد کی بجائے 177 فیصد کا اضافہ ہوا ہے۔ اس طرح، دہشت گردی کی وجہ سے مجموعی اقتصادی نقصان تقریبا 33 فی صد ہے۔کئی برسوں کے دوران ، آئی ایم ایف،حکومتِ پاکستان سمیت کئی ایجنسیوں نے، پاکستان کی معیشت پر دہشت گردی کے تباہ کن اثرات کا اندازہ لگانے کی کوشش کی ہے۔سلطان محمود کاکہناہے کہ پاکستان کی معیشت پر دہشت گردانہ تشدد کے منفی اثرات کے بارے میں واضح ثبوت ہیں۔

دہشت گردی کے سب سے زیادہ تباہ کن اثرات ترسیلات زر میں کمی اور ملکی سرمایہ کاری میں نقصان کے طور پر رکارڈ کئے گئے۔

مزید : کامرس