احتجاجی جلسے سربراہ عوامی تحریک کی علالت کے باعث ملتوی کیے،ترجمان

احتجاجی جلسے سربراہ عوامی تحریک کی علالت کے باعث ملتوی کیے،ترجمان

لاہور(نمائندہ خصوصی) پاکستان عوامی تحریک کے ترجمان نے کہا کہ دھرنے سے پاکستان عوامی تحریک کی مقبولیت بڑھی اور اندرون و بیرون ملک پاکستانی شہریوں کی ایک بڑی تعداد نے ممبر شپ حاصل کی ہے اور پاکستان کے ہر ضلع میں تنظیم سازی کا عمل جاری ہے، دھرنے کے بعد سربراہ عوامی تحریک ڈاکٹر طاہر القادری نے امریکہ کے تین شہروں میں ورکرز کنونشنز سے خطاب کیا۔ امریکہ، برطانیہ ،یورپ سمیت دنیا کے 30 ممالک میں پاکستان عوامی تحریک کی تنظیم سازی مکمل ہو چکی ہے دیگر ممالک میں تنظیم سازی جاری ہے۔ اس وقت بھی عوامی تحریک اوورسیز پاکستانیوں کی سب سے بڑی سیاسی جماعت ہے۔پاکستان عوامی تحریک کے ترجمان نے کہا ہے کہ دھرنے کے اختتام پر فیصل آباد، لاہور، ایبٹ آباد، بھکر میں کامیاب جلسے و دھرنے ہوئے جن میں لاکھوں کی تعداد میں شریک عوام نے ڈاکٹر طاہر القادری کی قیادت پر اپنے غیر متزلزل اعتماد کا اظہار کیا۔ترجمان نے مزید کہا کہ احتجاجی جلسوں کا سلسلہ سربراہ عوامی تحریک کی علالت کے باعث عارضی طور پر ملتوی ہوا ان کی وطن واپسی پر یہ سلسلہ دوبارہ شروع ہو گا۔ ترجمان نے کہا کہ یہ تاثر گمراہ کن ہے کہ پاکستان عوامی تحریک کے کارکنان کا مورال پہلے والا نہیں۔ انہوں نے کہا کہ منہاج القرآن کے زیر اہتمام چلنے والے تعلیمی ادارے، کالجز، یونیورسٹی میں طلباءکے داخلہ کی شرح گزشتہ سال کی نسبت بڑھی ہے۔ سانحہ ماڈل ٹاﺅن توہین آمیز خاکوں کی اشاعت پر بھی بھرپور احتجاج اور تنظیم نو کا سلسلہ بھی جاری ہے۔

ترجمان

مزید : صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...