اعلیٰ عدلیہ میں ججز کے تقرر کیلئے جوڈیشل کمیشن کا اجلاس28جنوری کو طلب

اعلیٰ عدلیہ میں ججز کے تقرر کیلئے جوڈیشل کمیشن کا اجلاس28جنوری کو طلب

اسلام آباد(اے این این) اعلیٰ عدلیہ میں ججز کے تقرر کیلئے جوڈیشل کمیشن کا اجلاس28جنوری کو طلب، جسٹس ریٹائرڈریاض احمد خان کو وفاقی شرعی عدالت کا چیف جسٹس، فیصل عرب کو سندھ ہائیکورٹ کا چیف جسٹس اور مقبول باقر کو سپریم کورٹ کا جج تعینات کیے جانے کا امکان۔ ذرائع کے مطابق اعلیٰ عدلیہ نے ججوں کے تقرر سے متعلق جوڈیشل کمیشن کا اجلاس28 جنوری کو طلب کرلیا گیا ہے ۔ اس اجلاس میں وفاقی شرعی عدالت کے چیف جسٹس اور سپریم کورٹ میں ایک جج کے تقرر پر غور کیا جائے گا۔ جوڈیشل کمیشن کی نامزدگی کے بعد ججوں کی تقرری کی منظوری پارلیمانی کمیٹی سے لی جائے گی اور حتمی منظوری وزیراعظم کی سفارش پر صدر ممنون حسین دینگے۔ ذرائع کے مطابق جوڈیشل کمیشن کے اجلاس میں جسٹس ریٹائرڈ ریاض احمد خان کو چیف جسٹس وفاقی شرعی عدالت بنائے جانے کا امکان ہے جبکہ سندھ ہائیکورٹ کے چیف جسٹس مقبول باقر کو سپریم کورٹ کا جج بنائے جانے اور ان کی جگہ جسٹس فیصل عرب کو سندھ ہائیکورٹ کا چیف جسٹس بنائے جانے کا بھی امکان ہے۔ جسٹس فیصل عرب سندھ ہائیکورٹ کے سینئر ترین جج ہیں جو اس وقت سابق صدر پرویز مشرف کے خلاف سنگین غداری کے مقدمے کی سماعت کرنے والی خصوصی عدالت کے بھی سربراہ ہیں

جوڈیشل کمیشن

مزید : صفحہ اول

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...