عمران خان اور ریحام کی روضہ رسولؐ پر حاضری ،نوافل ادا کئے

عمران خان اور ریحام کی روضہ رسولؐ پر حاضری ،نوافل ادا کئے

جدہ(محمد اکرم اسدسے) پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے اپنی زوجہ ریحام خان کے ساتھ عمرہ کی سعادت حاصل کرنے کے بعد جمعرات کو مدینہ منورہ جا کر روضہ رسولؐ پر حاضری دی اور حضور سرور کائناتؐ کے حضور درود و سلام پیش کیا جبکہ مسجد نبوی شریف میں نوافل ادا کئے، عمران خان نے بدھ کی صبح یہاں پہنچ کر احرام پہنا اور مکہ مکرمہ میں خانہ کعبہ کا طواف اور سعی کی عمران خان کی ایک جھلک دیکھنے کے لئے مکہ مکرمہ اور مدینہ منورہ میں بڑی تعداد میں لوگ جمع ہو گئے اور ساتھ ساتھ چلتے رہے۔ عمران خان نے دونوں مواقع پر دعائیں کر تے ہوئے پاکستان کی ترقی و خوشحالی، استحکام دہشتگردی کا خاتمہ اور سانحہ پشاور میں شہید ہونے والے بچوں اور ان کے اہل خانہ کے لئے خصوصی دعائیں کیں۔ عمران خان کے ساتھ ان کے دیرینہ ساتھی ذوالقرنین خان ساتھ ساتھ ہیں اور ان کے ترجمان کے فرائض بھی انجام دے رہے ہیں۔ عمران خان یہاں جمعہ کو اپنے اعزاز میں دی جانے والی پارٹی میں شرکت کرینگے جو خصوصی طور پر پشاور میں بسنے والے کینسر ہسپتال کے لئے عطیات کی درخواست بھی کرینگے۔ یہاں ان کی مقامی بزنس مینوں سے بھی ملاقات متوقع ہے۔ یاد رہے کہ ماضی میں بھی ان کے معتمد خان احسن رشید مرحوم جن کا حال ہی میں انتقال ہو گیا ہے ان کے لئے اپنے سعودی بزنس مین دوستوں کے ساتھ ملاقاتیں کراتے رہے جو ہسپتال کے لئے دل کھول کر مدد کرتے رہے ہیں۔ دریں اثناء یہاں پی ٹی آئی کے ورکرز مایوس ہیں کہ ان سے ان کے لیڈر کو دور رکھا جا رہا ہے اور ان سے ملنے کے لئے انہیں وقت نہیں دیا جا رہا جبکہ عمران خان کے ذرائع کہتے ہیں کہ وہ صرف عمرہ کی ادائیگی اور روضہ رسول پر حاضری کی غرض سے آئے ہیں اور انہوں نے شادی کے بعد ہنی مون کی بجائے عمرہ وزٹ کرنے کو ترجیح دی دوسری طرف پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ علامہ طاہر القادری بھی عمرہ کی ادائیگی اور روضہ رسول پر حاضری کے لئے یہاں آئے ہوئے ہیں اور پچھلے تین دنوں سے مدینہ منورہ میں مقیم ہیں جبکہ عمرہ انہوں نے ابھی کرنا ہے۔ دونوں طرف کے ذرائع مدینہ منورہ میں دونوں لیڈروں کی ملاقات کو خارج از امکان قرار دے رہے ہیں جبکہ ہوٹل میں مسجد نبویؐ شریف میں آپس میں ٹاکرہ ہو سکتا ہے جوعلیک سلیک تک ہی محدود ہو گا کیونکہ عمران خان کو جمعہ کی صبح واپس مکہ مکرمہ پہنچنا ہے۔ جبکہ علامہ طاہر القادری کے ذرائع ان کے اس وزٹ کو صرف روحانی وزٹ قرار دے رہے ہیں دوسری طرف عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید بھی یہاں پہنچ رہے ہیں جن کی علامہ طاہر القادری سے ملاقات متوقع ہے جس میں پاکستان کے حالات پر بھی بات چیت ہو گی اور شنید ہے کہ وہ علامہ طاہر القادری کو عمران خان کا پیغام پہنچائیں گے جو ملک کی سیاست میں آنے والے دنوں کے لئے اہم ہو گا۔

مزید : صفحہ اول

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...