حکومت کمزور جوڈیشل کمیشن بناناچاہتی ہے ،افتخار چوہدری نے دھاندلی چھپا کر مایوس کیا:عمران خان

حکومت کمزور جوڈیشل کمیشن بناناچاہتی ہے ،افتخار چوہدری نے دھاندلی چھپا کر ...
حکومت کمزور جوڈیشل کمیشن بناناچاہتی ہے ،افتخار چوہدری نے دھاندلی چھپا کر مایوس کیا:عمران خان

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

جدہ (مانیٹرنگ ڈیسک)تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خا ن نے کہاہے کہ جب تک جوڈیشل کمیشن نہیں بنایا جائے گا اس وقت تک اسمبلی میں نہیں جائیں گے ،افتخار چوہدری نے حکومت کی دھاندلی چھپا کر مایوس کیاہے،وزیراطلاعات نے عمران خان کے بیان کے ردعمل میں کہاکہ عمران خان عمرہ کرنے گئے اور وہاں بھی جھوٹ بولنے سے باز نہیں آئے۔عمران خان نے عمرہ کرنے کے بعد جدہ میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستانی قوم نے سب سے زیادہ قربانیاں اور عزت افتخار چوہدر ی کو دی ہے لیکن انہوں نے حکومت کی دھاندلی چھپا کر قوم کو مایوس کیاہے جس کے لیے عوام ان کو کبھی معاف نہیں کرگے ۔

ان کا کہناتھاکہ انہیں بہت امید تھی کہ 2013کے الیکشن صاف شفاف ہوں گے لیکن ایسا نہیں ہوا بلکہ دبا کر دھاندلی کی گئی اور حکومت نے کرپشن کرنے میں آصف زرداری کا ریکارڈ بھی توڑ دیا۔تمام سیاسی جماعتوں نے کہاکہ پنجاب میں بھی دھاندلی ہوئی ہے لیکن تحریک انصاف کا ساتھ کسی نے نہیں دیا اور تحریک انصاف اپنا حق لینے کے لیے سڑکوں پر آئی ۔

عمران خان نے کہاکہ انہوں نے اور ان کی قیادت نے اپنے استعفے اسمبلیوں میں جمع کرادیے ہیں لیکن وہ پوچھنا چاہتے ہیں کہ انہیں قبول کیوں نہیں کیاجارہا۔انہوں نے کہاکہ جب مضبوط جوڈیشل کمیشن نہیں بنے گا اس وقت اسمبلی میں نہیں جائیں گے اور حکومت کوشش کر رہی ہے کہ کمزور اور بے اختیار جوڈیشل کمیشن بنا کر جان چھڑوا لی جائے لیکن وہ ایسا بالکل نہیں ہونے دیں گے۔

عمران خا ن نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ حکومت میں ایک ہی خاندان کے لوگ بیٹھے ہیں اگر میرٹ پر لوگ بیٹھے ہوتے تو آج پٹرول بحران نہ پیدا ہوتا،فرنس آئل کی کمی کی وجہ سے بجلی کی پیداوار کم ہوئی اور بھارت کے ساتھ تعلقات بھی خراب نہ ہوتے ۔

وفاقی وزیراطلاعات پرویز رشید نے عمران خان کے بیان پر رد عمل دیتے ہوئے کہا کہ عمرا ن خان عمر ہ کی ادائیگی کے لیے گئے ہیں ان سے گزارش ہے کہ جھوٹ نہ بولیں بلکہ عبادت پر دھیان دیں۔

مزید : قومی