اسرائیلی وزیراعظم نے ہمارے منہ پر تھو ک دیا:وائٹ ہاؤس حکام

اسرائیلی وزیراعظم نے ہمارے منہ پر تھو ک دیا:وائٹ ہاؤس حکام
اسرائیلی وزیراعظم نے ہمارے منہ پر تھو ک دیا:وائٹ ہاؤس حکام

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

نیویارک (نیوز ڈیسک) اسرائیل اور امریکہ کے تعلقات کی قربت دنیا میں کسی سے ڈھکی چھپنی نہیں لیکن حالیہ میڈیا رپورٹس سے معلوم ہوتا ہے کہ امریکی صدر باراک اوباما اسرائیلی وزیراعظم بنیامین نیتنیاہو کے رویے سے خاصے ناخوش ہے۔ اسرائیلی اخبار ”ہیرٹز“ کے مطابق وائٹ ہاﺅس کے ایک اعلیٰ عہدیدار نے اخبار سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ چند باتیں ایسی ہوتی ہیں جو آپ کبھی نہیں کرتے لیکن اسرائیلی وزیراعظم نے ہمیں بھی حیران کردیا اور حالیہ قدم اٹھا کر اسرائیلی وزیراعظم نے سرعام ہمارے منہ پر تھوکا ہے تاہم انہیں یاد رکھنا چاہیے کہ صدر اوبامہ کی صدارت کا ڈیڑھ برس باقی ہے اور اسرائیل کو قیمت ادا کرنا پڑے گی۔ دراصل اسرائیلی وزیراعظم مارچ میں امریکہ کا دورہ کریں گے جس کے دوران وہ امریکی کانگریس سے خطاب بھی کریں گے۔

جنرل کی ہلاکت، اسرائیل تباہ کن آندھی کا انتظار کرے: ایران ،جاننے کیلئے کلک کریں

وائٹ ہاﺅس حکام (جن کانام نہیں بتایا گیا) کے حوالے سے عالمی میڈیا کا کہنا ہے کہ اسرائیلی وزیراعظم نے اپنے اس منصوبے سے وائٹ ہاﺅس کو آگاہ نہیں کیا۔ اپنے خطاب کے ذریعے اسرائیلی وزیراعظم کانگریس کو اس بات پر قائل کرنا چاہتے ہیں کہ ایران پر مزید کڑی پابندیاں لگائی جائیں جبکہ صدر اوبامہ کو امید ہے کہ ایران سے جلد ہی نیوکلیئر معاملے پر ڈیل ہوجائے گی جو کہ معاملے کا پرامن حل ہے۔ گزشتہ ہفتے نیتنیاہو سے گفتگو کرتے ہوئے بھی اوبامہ نے خبردار کیا تھا کہ پابندیاں لگانے کیلئے دباﺅ نہ ڈالا جائے اور کانگریس نے ایسا کوئی فیصلہ کیا تو وہ ویٹو کردیں گے لیکن معلوم ہوتا ہے اسرائیلی وزیراعظم کو ان کی بات سمجھ نہیں آئی۔ وائٹ ہاﺅس حکام کے مطابق مارچ میں دورہ کے دوران باراک اوبامہ اسرائیلی صدر سے ملاقات نہیں کریں گے۔

مزید : بین الاقوامی /اہم خبریں